الغزالی

جولائی
04
by احمدقاسمی at ‏3:32 PM
(53 مناظر / 0 پسند کردہ)
1 تبصرہ جات
کیا ارتغل غازی مسلمان تھا؟​

ااب سے بیس بائیس سال قبل تک یہ امر عمومامورخین کے نزدیک مسلم تھا کہ ارطغڑل غازی اور اس کے ساتھی ایشیائے کوچک میں میں داخل ہونے سے پہلے ہی مسلمان تھے لیکن انیس سو سولہ میں مسٹر ہر برٹ گینس نے اپنی مسند تالیف لطیف" اساس سلطنت عثمانیہ" کو شائع کرکے یہ تازہ تحقیق پیش کی شغوت میں بودوباش اختیار کرنے کے وقت عثمان اور اس کے قبیلے کے لوگ بت پرست تھے مسٹر گینس کے دلائل حسب ذیل ہیں ۔
تیرھویں صدی عیسوی کے ابتدا میں خراسان اور ماوراءالنہر کے دوسرے علاقوں کی جو قومیں ایشیائے کوچک کی سرحدوں پر نمودار ہوئیں ان کے اسلام لانے کا کوئی صریح ذکر کسی تاریخ میں نہیں ملتا ،'اس سے پہلے کہ ترکوں کے حملہ آور جب اس ملک میں داخل ہوئے تو کئی پستوں سے عربی اسلام کے زیر اثر رہتے آےتھے چنانچہ ال سجوق بھی جو کبھی مسلمان ہی تھے لیکن بعد کے آنے والے ترک جن میں عثمان پیدا ہوا کچھ بہت زیادہ اسلام کے زیر اثر نہیں رہے -خود مورخ نشری کے بیان سے بھی صاف اشارہ ملتا ہے کہ عثمان کا مورث اعلی" سلیمان شاہ" اور اس کے ساتھی جو اپنے وطن سے نکل کھڑے ہوئے تھے اور پچاس ہزار گھرانوں پر...
جولائی
03
by محمدداؤدالرحمن علی at ‏2:33 PM
(21 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
عباسی خلیفہ ابو جعفر منصور حدیث کا طالب
مقرر: مولانانورالحسن انور قادری​


جون
28
by احمدقاسمی at ‏3:26 PM
(25 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
تاریخ کا فقدان (قدیم ہندوستان)​

قدیم ہندوستان کا ادب متنوع بھی ہے اور مالا مال بھی ۔ لیکن تاریخ میں غیر معمولی پر ناقص ونا مکمل ۔ برہمنوں ، بودھوں اور چینیوں کے ادبی خزانوں میں ایک کتاب بھی ایسی نہیں جو کتاب سلاطین ، تاریخ لیوی ، یا ہیر ڈووٹس کی تواریخ کا مقابل کر سکے ۔اس کی وجہ یہ ہے کہ ہندوستان کا ماضی عظیم الشان کا ر ناموں سے با لکل عاری ہے ۔ اس کے بر خلاف وہ تمام عہد جرأٔت آفریں کار ناموں ، معاشرتی انقلاب اور خاندانی تغیرات سے بھر پور ہے ۔لیکن مقام حیرت ہے کہ یہ تمام واقعات ترتیب کے ساتھ با قاعدہ تاریخ کی صورت اختیار نہ کر سکے ۔ادبی سر گرمیوں کےایک اہم میدان سے اس بے التفاتی اور بے رخی کا سبب یا تو یہ تھا کہ لوگوں میں تاریخی ذوق کا فقدان تھا ، یا یہ کہ وہ مذھبی فرقے جو ادب پر اختیار رکھتے تھے اور اس کی نشو نما میں سر گرم کار تھے وہ خود بے اعتنائی برت رہے تھے ، لیکن اس حقیقت سے انکار نہیں کیا جا سکتا کہ قدیم ہندوستان کا مورخ تاریخی شواہد واسناد کی کمیابی سے پیدا ہو نے والی ابتدائی مشکلات میں پھنس کر رہ جا تا ہے ۔

قدیم ہندوستان کی تاریخ کے مآخذ کو آسانی کے لئے...
جون
28
by شرر at ‏2:57 PM
(26 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
فاروقی شان قصہ قرطاس کی روشنی​
مرض وفات کے دوران جو بعض غیر معمولی واقعات پیش آئے ان میں سے ایک یہ بھی ہے کہ یوم الخمیس یعنی جمعرات کے دن (ظہرکے وقت سے پہلے ) جبکہ آپ ﷺ پر بیماری کا شدید غلبہ تھا ، آپ نے ایک وقت وصیت لکھنے کا ارادہ ظاہر فرما دیا اور حضرت عبد الرحمان بن عوف ؓ (اور بعض روایت کے مطابق حضرت علیؓ ) سے فرما یا کہ بکری کے شانہ کی ہڈی ( کتف) کہ جو چوڑی ہو نے کے سبب لکھنے کے زیادہ پسند کی جاتی ہے یا کوئی تختہ لے آؤ تاکہ میں اس پر ابو بکر ؓ کے لئے وصیت لکھ دوں (اور دوسری روایتوں میں خلافت ابو بکر کے بجائے کوئی وصیت یا کوئی بات لکھنے کا ذکر ہے )

حضرت عبد الرحمنؓ بن عوف ،آپ ﷺ کے فرمان کے مطابق ہڈی یا تختہ ( کا غذ) لانے کے لئے اٹھنا ہی چا ہٹے تھے کہ آپ ﷺ نے فرما یا کہ اچھا رہنے دو اب ضرورت محسوس نہیں کرتا ۔ چونکہ آپ ﷺ نے لکھنے لکھانے کا سامان منگوایا تھا اس لئے اس واقعہ کو ''واقعہ قرطاس، قصہ قرطاس اور حدیث قرطا س ''کہتے ہیں ۔

حضرت ابن عباسؓ کی حدیث میں یہ الفاظ ہیں ۔
جب رسول اللہ ﷺکی بیماری بہت بڑھ گئی تو فرما یا لکھنے کا سامان (کاغذ قلم ) لاؤ...
جون
26
by احمدقاسمی at ‏3:10 PM
(28 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
مسیلمہ کذاب اور سجاح کی جوڑی۔​

جب سجاح مسیلمہ کے مقابل آئی اس نے مدافعت کے لیے اپنے قلعہ کا دروازہ بند کر لیا سجاح نے اس سے کہا کہ تم آکر مجھ سے ملو ، مسیلمہ نے کہا اس شرط پر کہ اپنے ساتھیوں کو ہٹادو ، سجاح نے حسبہ اس پر عمل کیا مسیلمہ نے اپنے آدمیوں کو حکم دیا کہ ملا قات لے لیے ایک خیمہ نصب کرواؤ اور اس میں لوبان اور عود کی خوب دھونی دو ۔تاکہ اس کی خواہش جماع میں تحریک ہو جب اس خیمہ میں گئی مسیلمہ قلعہ سے اتر آیا اور اس نے حکم دیا کہ دس آدمی یہاں پہرہ دیں اور دس اس طرف پہرہ پر کھڑے رہیں ۔اس کے بعد مسیلمہ نے سجاح سے ملاقات کی اور اس کے ساتھ لیٹ گیا اور اسنے کہا کہئے کیا الہام ہوا ہے ،سجاح نے کہا بھلا عورتیں بھی ابتدا کرتی ہیں ہاں تم کو جو الہام ہوا ہو اس کے مطابق عمل کرو ۔مسیلمہ نے کہا ، کیا تم نے اپنے اس رب کو نہیں دیکھا کہ اس نے حاملہ عورت کے ساتھ کیسا سلوک کیا ۔اس کی پسلیوں اور انتڑیوں کے درمیان سے ایک جاندار بچہ پیدا کیا :سجاح نے کہا پھر کیا، مسیلمہ نے کہا مجھے الہام ہوا ہے: اللہ نے عورت کو فرج بنا یا ہے اور مردوں کو ان کا شوہر ہم ان میں جس طرح چاہیں دخول کریں...