الغزالی

مئی
15
by محمدداؤدالرحمن علی at ‏9:57 AM
(204 مناظر / 0 پسند کردہ)
25 تبصرہ جات
درس خلاصہ قرآن
خلاصہ پارہ نمبر 1
مدرس: حضرت مولانا خادم حسین صاحب
بتاریخ:7 مئی 2019 بمطابق یکم رمضان1440ھ
اپریل
25
by محمدداؤدالرحمن علی at ‏6:52 AM
(136 مناظر / 2 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
ﻣﺤﻠﮯ ﮐﮯ ﻣﺴﺠﺪ ﮐﯽ ﺗﻌﻤﯿﺮﻭﻣﺮﻣﺖ ﮐﺎ ﮐﺎﻡ ﺷﺮﻭﻉ ﮨﻮﺍ ﺗﻮ ﻣﻄﻠﻮﺑﮧ ﺭﻗﻢ ﺍﮐﭩﮭﮯ ﮨﻮﻧﮯ ﻣﯿﮟ ﺩﯾﺮ ﮨﻮ ﮔﺌﯽ۔ﮐﻤﯿﭩﯽ ﺍﻧﺘﻈﺎﻣﯿﮧ ﻧﮯ ﺍﻣﺎﻡﺻﺎﺣﺐ ﺳﮯ ﮐﮩﺎ ﮐﮧ ﻣﺤﻠﮯ ﮐﯽ ﺍُﺱ ﻧﮑﮌ ﻭﺍﻻ ﺑﻨﺪﮦ ﮨﮯ ﺗﻮ ﺑﮍﺍﺗﺎﺟﺮ ﻣﮕﺮ ﺍﭘﻨﮯ ﻓﺴﻖ ﻭ ﻓﺠﻮﺭ ﻣﯿﮟ ﺑﮯ ﺍﻧﺘﮩﺎ ﮐﻮ ﭘﮩﻨﭽﺎ ﮨﻮﺍ ﮨﮯ۔ﺍﮔﺮ آﭖ ﻣﯿﮟ ﮨﻤﺖ ﮨﮯ ﺗﻮ ﺍﺱ ﺳﮯ ﺑﺎﺕ ﮐﺮﻟﯿﮟ ﻣﻤﮑﻦ ﻫﮯ ﮐﮧ ﮐﻮﺋﯽ ﺻﻮﺭﺕ ﺑﻦ ﺟﺎﺋﮯ -ﺍﻣﺎﻡ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﺣﺎﻣﯽ ﺑﮭﺮ ﻟﯽ ﺍﻭﺭ ﺍﯾﮏ ﺩﻥ ﺷﺎﻡ ﮐﻮ ﺟﺎ ﮐﺮ ﺍﺱ ﮐﺎ ﺩﺭﻭﺍﺯﮦ ﮐﮭﭩﮑﮭﭩﺎﯾﺎ۔ﭼﻨﺪ ﻟﻤﺤﮯ ﺑﻌﺪ ﺗﺎﺟﺮ ﺻﺎﺣﺐ ﺍﻧﺪﺭ ﺳﮯ ﻧﻤﻮﺩﺍﺭ ﮨﻮﺋﮯﺍﻣﺎﻡ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﺍﭘﻨﮯ آﻧﮯ ﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺑﺘﺎﯾﺎ ﺗﻮ ﺻﺎﺣﺐ ﺳﭩﭙﭩﺎ ﮔﺌﮯ , ﺍﻭﺭ ﺑﻮﻟﮯ ﮐﮧ ﺍﯾﮏ ﺗﻮ ﺗﻤﮩﺎﺭﮮ ﺍﺳﭙﯿﮑﺮﻭﮞ ﮐﮯ ﮨﺮ ﻭﻗﺖ ﭼﻠﻨﮯ ﺳﮯ ﺳﮑﻮﻥ ﺑﺮﺑﺎﺩ ﮨﮯ ﺍﻭﭘﺮ ﺳﮯ ﺗﻢ ﺍﺩﮬﺮ ﺗﮏ آﭘﮩﻨﭽﮯ ﻫﻮ۔ﺍﻭﺭ ﺩﻭﺳﺮﮮ ﻣﺤﻠﮯ ﺩﺍﺭ ﻣﺮ ﮔﺌﮯ ﮨﯿﮟ ﺟﻮ ﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﭼﻨﺪﮦ ﻟﯿﻨﮯ ﮐﯽ ﺿﺮﻭﺭﺕ آﻥ ﭘﮩﻨﭽﯽ ..ﺍﻣﺎﻡ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ , ﺻﺎﺣﺐ , ﺍﻟﻠﮧ ﮐﺎ ﺩﯾﺎ ﮨﻮﺍ ﻣﻮﻗﻊ ﮨﮯ آﭖ ﮐﯿﻠﺌﮯ آﭖ ﮐﮯ ﺩﺳﺖِ ﺗﻌﺎﻭﻥ ﮐﯽ ﺿﺮﻭﺭﺕ ﮨﮯ , ﻣﯿﮟ ﺧﺎﻟﯽ ﮨﺎﺗﮫ ﻧﮩﯿﮟ ﺟﺎﻧﺎ ﭼﺎﮨﺘﺎ , ﺍﻟﻠﮧ آﭖ ﮐﮯ ﻣﺎﻝ ﻭ ﺟﺎﻥ ﻣﯿﮟ ﺑﺮﮐﺖ ﺩﮮ ﮔﺎ .تاجر ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﺍﻣﺎﻡ ﺻﺎﺣﺐ ﺳﮯ ﮐﮩﺎ ﻻؤ ﺍﭘﻨﺎ ﮨﺎﺗﮫ ﻣﯿﮟ ﺗﻤﮩﯿﮟ ﭼﻨﺪﮦ ﺩﻭﮞ۔ﺍﻣﺎﻡ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﺟﯿﺴﮯ ﮨﯽ ﮨﺎﺗﮫ ﺑﮍﮬﺎﯾﺎﺍﺱ ﺗﺎﺟﺮ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯﺍﻣﺎﻡ ﮐﮯ ﮨﺎﺗﮫ ﭘﺮ ﺗﮭﻮﮎ ﺩﯾﺎ۔ﺍﻣﺎﻡ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﺑﺴﻢ ﺍﻟﻠﮧ ﭘﮍﮪ ﮐﺮ ﯾﮧ ﺗﮭﻮﮎ ﻭﺍﻻ ﮨﺎﺗﮫ ﺍﭘﻨﮯﺳﯿﻨﮯ ﭘﺮ ﻣﻞ ﻟﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﺳﺮﺍ ﮨﺎﺗﮫ ﺍﺱ ﺗﺎﺟﺮ...
اپریل
20
by محمدداؤدالرحمن علی at ‏7:06 AM
(90 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
ماہ شعبان المعظم کی ناجائز رسوم اور بدعات و منکرات

از فقیہ الامت مولانا مفتی سید عبدالکریم گمتھلوی ترمذی رحمہ اللہ تعالیٰ

منکراتِ ماہ ہذا:
اس شبِ مبارک میں صرف دوتین باتیں ثابت ہیں ، عبادت کرنا اور قبرستان میں جاکردعائے مغفرت کرنا۔اس کے علاوہ شریعت میں کچھ واردنہیں ہوا، حتیٰ کہ اس رات کوایصالِ ثواب وغیرہ کی بھی کوئی اصل نہیں ۔اگر مفصل دلائل مطلوب ہوں تو ’’ترجیح الراحج‘‘ حصہ سوم، فصل سوم ضرورقابل ملاحظہ ہے ۔مگرجاہل لوگوں نے عبادت کی جگہ بہت سی بے ہودہ رسمیں ایجاد کر رکھی ہیں جن کو سیدی مرشدی حضرت حکیم الامت مولاناتھا نوی دامت برکاتہم نے ’’إصلاح الرسوم ‘‘میں بخوبی بیان فرمایاہے ۔لہٰذا بعینہٖ’’ إصلاح الرسوم‘‘ کی عبارت درج ذیل ہے :
شب براء ت میں حدیث شریف سے اس قدرثابت ہے کہ حضور ﷺ بحکم حق تعالیٰ جنت البقیع میں تشریف لے گئے اور اموات کے لیے استغفار فرمایا ۔اس سے آگے سب ایجاد ہے جس میں مفاسدِ کثیرہ پیداہوگئے ہیں:
۱۔بعض لوگ کہتے ہیں کہ حضورسرورِعالم ﷺ کا دندانِ مبارک جب شہیدہوا تھا آپﷺ نے حلوہ نوش فرمایاتھا۔ یہ بالکل موضوع اور غلط قصہ ہے، اس کااعتقاد کرناہرگز جائز نہیں...​
اپریل
08
by مولانانورالحسن انور at ‏8:31 AM
(139 مناظر / 1 پسند کردہ)
1 تبصرہ جات
ایک ڈاکٹر نے مریض سے پوچھا جناب آپ کے تین دانت کیوں ٹوٹ گے
مریض جناب بیگم نے کڑ ک روٹی بناٰ ی تھی
ڈاکٹر تم نے انکار کردینا تھا

مریض لمبا سانس کھینچ کر جی انکار ہی کیا تھا یہ سب اسی کا نتیجہ ہے
جی ہاں میاں بیوی کا رشتہ محبت پیار کا ہے جسطرح نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے بیوی کے حقوق بیان کئے ہیں اسی طرح خاوند کےحقوق کو بھی بیان کیا ہے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فر مایا کیا میں تمھیں جنتی عورتیں نہ بتاوں صحابہ نے عرض کی جی یارسول اللہ آپ نے فر مایا محبت کر نے والی زیادہ بچے جننے والی جب شوھر ناراض ہو جاے تو یہ شوھر سے کہے میرا ہاتھ آپ کے ہاتھ میں ہے میں اسوقت وقت تک چین سے نہیں بیٹھوں گی جب تک آپ راضی نہ ہو جائیں ( طبرانی) ایک شخص اپنی بیٹی لیکر دربار رسالت میں آے اور عرض کی یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم میری بیٹی شادی سے انکاری ہے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا اپنے باپ کی بات مان لو
کہنے لگی آپ مجھے پہلے یہ بتائیں شوھر کا حق کیا ہے
آپ نے فرمایا اگر شوھر کو کوئی زخم...
مارچ
30
by مولانانورالحسن انور at ‏9:00 AM
(149 مناظر / 1 پسند کردہ)
1 تبصرہ جات
پرانےوقتوں کی بات ہےچار چور چوری کے ارادے سے نکلے را ت بھر پھرتے رہے کچھ نہ ملا واپس جانے لگے تو ایک حویلی سے گدھے کی آواز آٰی ا ن نے سوچا خالی ہاتھ کیا جانا ہے یہ گدھا ہی لے چلتے ہیں ایک چور اندر داخل ہوا اس نے دروازہ کھولدیا یہ سب اندر داخل ہوگے
تو وہاں ایک بوڑھا سورہا تھا انہیں بہت غصہ آیا کہ اتنی بڑی حویلی اور اس میں صرف ایک بوڑھا اور گدھا ان نے مشورہ کیا کہ ہم بابا اٹھا کر لے جاتے ہیں ان نے چارپای سمیت بابے کو اٹھایا اور چلے گے
صبح دیر تک بابا جی گھر نہین پہنچے تو بیٹوں کو پریشانی ہوی دیکھا تو حویلی میں بابا موجود نہیں تلاش کیامگر نہ مل سکے چپ کرکے بیٹھ گے تو اہل محلہ نے بابے کے متعلق پوچھنا شروع کردیا کھوجی کا انتظام کیا اور چوروں کے گاوں پہنچ گے نمبردار کو صورت حال بتای نمبردار اپنے گاوں کے اچھے برے سب کو جانتا تھا اس نے چوروں کو طلب کیا چوروں نے ساری صورت حال بتای کہ یہ چار بیٹے جوان ہیں مگر بابے کو حویلی مین تنہا سولا رکھا ہے چوروں نے کہا ہم نے بابا نہیں دینا اسے ہم اپنے باپ کی طرح سمھجتے ہیں ۔۔۔۔
یہ بابے کی محبت میں نہیں لوگوں کے طعنوں کی وجہ سے آیے ہیں
اگر بابا...