الغزالی

اپریل
27
by احمدقاسمی at ‏10:02 PM
(95 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
اللہ تعالیٰ کی ایک اور عجیب بھی مخلوق​
نبی کریمﷺ نے فرمایا کہ اللہ تعالیٰ کی ایک اور عجیب بھی مخلوق بھی ہے اور اللہ تعالیٰ کی قدرت پر بڑی حیرت ہے کہ بعض چیزیں جو ہم نے نہیں دیکھیں وہ اس سے بھی زیادہ تعجب خیز ہیں۔

اللہ تعالیٰ نے دو شہر پیدا فرمائے ان میں سے ایک مشرق میں تھا اور دوسرا مغرب میں ۔مشرقی شہر کے لوگ قوم عاد میں سے ہیں جو مومنین تھے اور مغربی شہر کے لوگ قوم ثمود کے مومنین کی با قیات ہیں۔ مشرقی شہر کا نام سریانی زبان میںَ،،مرقیسیا،، تھا اور عربی زبان جا بلق،، ہے اور مغربی شہر کا نام سریانی زبان میں ،، بر جیسا،، اور عربی زبان میں ،،جابرس،، ہے دونوں شہر وں کے دس ہزار دروازے ہیں اور ہر دروازے کا آپس میں درمیانی فاصلہ ایک فرسخ ( تقریبا ۴کلو میٹر ) ہے ۔ہر دروازے پر ایک روز ایک فرشتہ پہرہ دیتا ہے جو اسلحہ سے لیس ہوتا ہے ۔ جس فرشتے کی باری ایک مرتبہ آجاتی ہے تو قیامت تک اس کی دوبارہ باری نہیں آئیگی ۔نبی ﷺ نے فرمایا قسم ہے اس ذات کی جس کے قبضہ میں محمد ﷺ کی جان ہے اگر لوگوں کی کثرت نہ ہوتی اور ان کی آوازوں کا بے پناہ شور نہ ہوتا تو تمام دنیاان فرشتوں کی آواز یں سنتی۔...
اپریل
26
by طالب علم at ‏8:24 PM
(119 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
غیر مقلدین کے نعرے کا رد خود زبیر علی زئی سے
آخرمان ہی گئے نا!!!
بعض علمی یتیموں کی خست کا یہ عالم ہو تا ہے کہ عقل کے استعمال میں بھی ’’کفایت شعاری‘‘ سے کام لیتے ہیں با لکل ایسے ہی فر قہ اہل حدیث پا ک وہند کا ایک خود سا ختہ محقق افغان بھگوڑا زبیر علی زئی مماتی ہے۔ موصوف کا اپنے قلم کو خبثِ باطن کے اظہار کا ذریعہ بنا کر دن رات اہل السنت والجماعت کے خلا ف کیچڑ اچھا لنا اس کا محبوب مشغلہ ہے مگر ……

بسا اوقات بو کھلا ہٹ میں یہ بیچارا اپنے مسلک والوں کو بھی ایسے ہی کاٹ کھا تا ہے جس طر ح یہ اہل السنت والجماعت کے اکا بر کو کاٹ کھا نے کو دوڑتا ہے جس کی زندہ مثال اس کا’’ الحدیث‘‘ نامی شمارہ ہے۔

اپنے’’ الحدیث‘‘ نامی شمارے میں اس شخص نے اپنے فرقے کی سابقہ تاریخ پر مٹی ڈالتے ہوئے اہل السنۃ والجماعۃ علماء دیوبند کے موقف کو دبے لفظوں میں تسلیم کر لیا ہے۔’’اہل حدیث کے دو اصول ،قال اللہ وقال الرسول ‘‘مگر اس نعرہ لگا نے والے تمام افراد فرقہ اہل حدیث زبیر علی زئی افغان بھگوڑے کی تحقیق میں جھوٹے اور فتنہ پر ور لو گ قرارپائے ہیں ۔زبیر علی زئی مماتی افغان بھگوڑا لکھتا ہے :

’’اہل حدیث کے خلاف بعض جھوٹے...
اپریل
26
by طالب علم at ‏8:24 PM
(68 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
ﺣﻨﻔﯽ ﺑﮍﮮ ﮔﺴﺘﺎﺥ ﮨﯿﮟ ﺟﻮﺍﭘﻨﯽ ﮐﺘﺎﺏ " ﻫﺪﺍﯾﮧ " ﮐﻮ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﮯ ﺑﺮﺍﺑﺮ ﺟﺎﻧﺘﮯ ﮨﯿﮟ
ﻭﺳﻮﺳﻪ = ﺣﻨﻔﯽ ﺑﮍﮮ ﮔﺴﺘﺎﺥ ﮨﯿﮟ ﺟﻮﺍﭘﻨﯽ ﮐﺘﺎﺏ " ﻫﺪﺍﯾﮧ " ﮐﻮ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﮯ ﺑﺮﺍﺑﺮ ﺟﺎﻧﺘﮯ ﮨﯿﮟ ۰
ﺟﻮﺍﺏ = ﯾﮧ ﻭﺳﻮﺳﮧ ﺑﻬﯽ ﻓﺮﻗﮧ ﺟﺪﯾﺪ ﻧﺎﻡ ﻧﮩﺎﺩﺍﻫﻞ ﺣﺪﯾﺚ ﮐﮯ ﺟﮩﻼﺀ ﻧﮯ ﮐﺎﻓﯽ ﻣﺸﮩﻮﺭﮐﯿﺎ ﻫﮯ ، ﺍﻭﺭﺍﭘﻨﯽ ﮐﺘﺐ ﻭﺭﺳﺎﺋﻞ ﻣﯿﮟ ﺍﺱ ﻭﺳﻮﺳﮧ ﮐﻮ ﺑﺮﺍﺑﺮﻟﮑﻬﺘﮯ ﭼﻠﮯ ﺟﺎﺭﻫﮯ ﮨﯿﮟ ، ﺍﻭﺭﻋﻮﺍﻡ ﺍﻟﻨﺎﺱ ﮐﻮﺑﻬﯽ ﮔﻤﺮﺍﻩ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﻟﯿﺌﮯ ﯾﮧ ﻭﺳﻮﺳﮧ ﺳﻨﺎﺗﮯ ﺍﻭﺭﭘﮍﻫﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ،
ﺍﺱ ﻭﺳﻮﺳﮧ ﮐﮯ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﺎ ﻃﺮﯾﻘﮧ ﻋﺎﻡ ﻃﻮﺭ ﭘﺮﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﮨﻮﺗﺎ ﻫﮯ ﮐﮧ ﭘﮩﻠﮯ ﻋﻮﺍﻡ ﮐﻮﺑﺎﻭﺭ ﮐﺮﺍﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﺩﯾﮑﻬﻮ ﯾﮧ ﺣﻨﻔﯽ ﮐﺘﻨﮯ ﮔﺴﺘﺎﺥ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﺍﭘﻨﯽ ﻓﻘﮧ ﮐﯽ ﮐﺘﺎﺏ " ﻫﺪﺍﯾﮧ " ﮐﮯ ﺑﺎﺭﮮ ﻣﯿﮟ ﯾﮧ ﻧﻈﺮﯾﮧ ﺭﮐﻬﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﯾﮧ ﺑﺎﻟﮑﻞ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ ﻫﮯ ،
ﺍﻭﺭ ﻭﻩ ﺷﻌﺮ ﺳﻨﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺟﻮ " ﻫﺪﺍﯾﮧ " ﮐﮯ ﺑﺎﺭﮮ ﻣﯿﮟ ﻣﺸﮩﻮﺭ ﮨﮯ ، ﺣﮑﯿﻢ ﺻﺎﺩﻕ ﺳﯿﺎﻟﮑﻮﭨﯽ ﻧﮯﺍﯾﮏ ﮐﺘﺎﺏ " ﺳﺒﯿﻞ ﺍﻟﺮﺳﻮﻝ " ﻟﮑﻬﯽ ، ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﻓﻘﮧ ﺣﻨﻔﯽ ﮐﮯ ﺧﻼﻑ ﺑﮩﺘﺎﻥ ﻃﺮﺍﺯﯼ ﻭﺗﮩﻤﺖ ﺑﺎﺯﯼ ﻭﮐﺬﺏ ﻭﺧﯿﺎﻧﺖ ﮐﮯ ﻋﺠﯿﺐ ﮐﺮﺗﺐ ﺩﮐﻬﺎﺋﮯ، ﺍﺳﯽ ﮐﺘﺎﺏ " ﺳﺒﯿﻞ ﺍﻟﺮﺳﻮﻝ " ﻣﯿﮟ ﺣﮑﯿﻢ ﺻﺎﺣﺐ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ، ﺟﺲ ﻃﺮﺡ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﺍﺻﺢ ﺍﻟﮑﺘﺐ ﺻﺤﯿﺢ ﺑﺨﺎﺭﯼ ﻭﻣﺴﻠﻢ ﮨﮯ ، ﺍﺳﯽ ﻃﺮﺡ ﺍﺣﻨﺎﻑ ﻣﯿﮟ ﻫﺪﺍﯾﮧ ﮐﺎ ﺩﺭﺟﮧ ﻫﮯ ، ﻫﺪﺍﯾﮧ ﻣﯿﮟ ﻟﮑﻬﺎ ﻫﮯ ﺍﻥ ﺍﻟﻬﺪﺍﻳﺔ ﻛﺎﻟﻘﺮﺁﻥ
ﮐﮧ ﻫﺪﺍﯾﮧ ﻣﺜﻞ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﮯ ﻫﮯ ۰ ‏( ﺳﺒﯿﻞ ﺍﻟﺮﺳﻮﻝ ﺹ 228
ﺍﺏ ﺣﮑﯿﻢ ﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﺗﻮ ﯾﮧ...
اپریل
26
by طالب علم at ‏8:21 PM
(55 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
حدیث کی تعریف:
حدیث: چار چیزوں کا نام ہے:
١ـ نبی پاکﷺنے زندگی میں جو کچھ ارشاد فرمایا ہے: وہ سب حدیث ہے۔
٢ـ آپؐ نے زندگی میں جو بھی کام کیا ہے: وہ حدیث ہے۔
٣ـآپﷺنے جن باتوں کو برقرار رکھا ہے: وہ بھی حدیث ہے۔ یعنی کسی مسلمان نے کوئی کام کیا، نبی پاکﷺنے اس کو دیکھا، یا وہ آپؐ کے علم میں آیا اور آپؐ نے اس پر نکیر نہیں فرمائی بلکہ اس کو برقراررکھا، اس کی تائید فرمائی تو یہ بھی حدیث ہے۔
٤ـ نبی پاکﷺکی صفات یعنی ذاتی حالات بھی حدیث ہیں۔
ان چار چیزوں کا نام حدیث ہے۔ اب ہر ایک کی مثال لیں:

قولی حدیث کی مثال:
بخاری کی پہلی حدیث ہے:اِِنَّمَا الأَعْمَالُ بِالنِّیَّة: عمل کا نیت سے موازنہ کیا ہوا ہے، عمل نیت کے موافق ہوتا ہے، عبادت کی نیت ہے تو ثواب ملے گا، اور عبادت کی نیت نہیں ہے تو وہ محض عمل ہے، اس پر ثواب کچھ نہیں ملے گا۔
حدیث کا تعلق عبادات سے ہے:
یہاں کچھ لوگ پوچھتے ہیں: ایک شخص اس لئے چوری کرتا ہے کہ وہ غریبوں کی مدد کرے، یا لوگ پوچھتے ہیں کہ پیسہ گھر میں تو رکھا نہیں جاسکتا، بینک میں رکھنا ضروری ہے، پس اگر کوئی بینک میں کھاتہ کھلواتا ہے اور کرنٹ اکاونٹ کے بجائے سیونگ اکاونٹ...
اپریل
26
by طالب علم at ‏8:19 PM
(41 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
وسوسہ
قرآن کریم میں ہے: وَاعْتَصِمُوا بِحَبْلِ اللَّهِ جَمِيعًا وَلَا تَفَرَّقُوا (آل عمران:103)چارائمہ نے دین کوچارٹکڑوں میں بانٹ دیاہے، ایک اسلام کوچارحصوں میں تقسیم کردیا۔یہ تقسیم تقلید ہی کاثمرہ ہے۔
جواب: تمام ائمہ کی منزلِ مقصود اسلام ہے۔ یہ چار فقہیں تو بمنزلہ راستہ کے ہیں۔ منزل تک پہنچنے کے چارراستے ہیں۔نیز اگر ان چارائمہ کی تقلید سے آزادی دیدی جائے توپھر ہربندہ مستقل فرقہ ہوگا۔