الغزالی

اکتوبر
22
by مفتی ناصرمظاہری at ‏7:47 PM
(9 مناظر / 0 پسند کردہ)
0 تبصرہ جات
کاش یہ بات ترے گوش گراں تک پہنچے
ناصرالدین مظاہری
۱۸؍اکتوبر۲۰۱۸عیسوی کوگجرات کے مشہورتعلیمی وتربیتی ادارہ دارالعلوم فلاح دارین ترکیسرضلع سورت میں فخرگجرات، مفکرملت حضرت مولانامحمدعبداللہ کاپودرویؒکی حیات اورخدمات پرعظیم الشان سیمینارمنعقدہوا،یہ سمیناراس معنیٰ کرنہایت اہمیت کاحامل تھاکیونکہ اپنی نوعیت کاپہلابھی تھااورملک کی بے شمار شخصیات بھی بیک وقت ایک بینرتلے جمع تھیں،بیرون ملک سے بھی بہت سے مہمانان نے سیمینارمیں شرکت کی،گویاایک بین الاقوامی اجتماع تھا،حضرت مولانامحمدعبداللہ کاپودرویؒکی شخصیت سے متعلق کثیرتعدادمیں مقالے لکھوائے گئے اورمقالہ نگاروں کوشرکت کی دعوت دی گئی،چنانچہ منتظمین کے مطابق ۱۳؍اکتوبرتک ۱۸۵؍ مقالات موصول ہوگئے تھے جب کہ شایدکم وبیش اتنے ہی مقالات ۱۳؍اکتوبرکے بعدجمع ہوگئے ہوں گے۔ایک آوازپراتنے مقالات کالکھاجاناصاحبِ سیمینارحضرت کاپودرویؒکی بے مثال مقبولیت اورمحبوبیت پردلالت کرتاہے۔یہ سچ ہے کہ اتنی بڑی تعدادمیں مقالہ نگاروں نے شرکت فرمائی لیکن پانچ فیصدبھی مقالے نہ توپڑھے جاسکے نہ ہی مقالہ نگاروں کوتلخیص ہی پیش کرنے کی نوبت آسکی۔
چونکہ وقت کم تھااوروہ...
اکتوبر
02
by محمدداؤدالرحمن علی at ‏6:47 PM
(53 مناظر / 0 پسند کردہ)
2 تبصرہ جات
مدرسہ کے نگران نے بچوں کو رات دیر سے گیٹ میں چوری چھپے داخل ہوتے پکڑ لیا

نام بتاؤ سب اپنا اپنا

شرح ابن تہذیب بمبئی

گلستاں ابن بوستاں پالنپوری

ہدایہ ابن عقیل کولہاپوری

مرقات ابن جرجان بلساڑی

صبح مہتمم صاحب کے پاس نام پہنچے پرچی دیکھ کے مسکراکے رہ گئے۔​
اکتوبر
02
020202.gif
by محمدداؤدالرحمن علی at ‏11:17 AM
(52 مناظر / 0 پسند کردہ)
2 تبصرہ جات

@ندیم خان صاحب آپ کو میری طرف سے اور الغزالی انتظامیہ کی طرف سے آپ کو الغزالی پر دل کی اتاہ گہرائیوں سے خوش آمدید

aksgif_mihanblog_com_welcome_خوش_آمدید_تصاویر_متحرک_ت.gif

آپ آئے بہار آئی
11CB3499-D7A8-43AC-9B32-741F2900C9B4.jpeg
امید ہے کہ آپکی آمد سے فورم کی رونق میں اضافہ ہو گا اور آپ سے بھت کچھ سیکھنے کو ملے گا۔

1317679804.gif

آپکو ہمیشہ الغزالی پر خوش آمدید...
ستمبر
29
by مفتی ناصرمظاہری at ‏11:24 PM
(76 مناظر / 4 پسند کردہ)
2 تبصرہ جات
بسم اللہ الرحمن الرحیم
اے باپ!ہم شرمندہ ہیں!

مفتی ناصرالدین مظاہری ،استاذمظاہرعلوم سہارنپور
محرم الحرام ۱۴۴۰ھ کی پندرہ تاریخ تھی،میں اپنی درسگاہ میںبیٹھابچوں کوپڑھارہاتھا،دورانِ سبق کسی سے بات کرنااخلاقاًبھی غلط ہے ، ایک صاحب حاضرہوئے، بجھابجھاچہرہ، اڑی اڑی رنگت،فکراوراضطراب کی پرچھائیاں ان کے چہرے بشرے سے ہویدا،سلام کرکے ہاتھ بڑھادیا، میں نے سلام کاجواب تودے دیامگرسبق کی وجہ سے ناگواری کے باوجودبھی مصافحہ کیااورپڑھانے میں مشغول ہوگیا،نوواردنے اجازت طلب اندازمیں کہاکہ میں دوباتیں کرناچاہتاہوں ؟میں نے کہاسبق کے بعدکرلینااورجلدی ہوتو دفترچلے جائیے و ہاں حضرت ناظم صاحب بھی ہیں اور دیگر حضرات بھی موجودہیں اُن سے بات کرلیجئے!اُنہوں نے کہا:صرف ایک منٹ میں اپنی بات پوری کرلوں گا،میں نے بادلِ ناخواستہ کہاکہ کہئے:انہوں نے جب بولناشروع کیاتوحیرت واستعجاب کی وجہ سے میری...