نتائجِ‌تلاش

  1. مفتی ناصرمظاہری

    داستان دبستاں

    حضرت مولانامحمدسلیم قاسمی زیدپوری مدظلہ ناصرالدین مظاہری انسانی ہجوم میں بہت کم شخصیات ایسی ہوتی ہیں جو’’شخصیت‘‘کہے جانے کے لائق ہوتی ہیں،یہ زمانہ تشخص کازمانہ ہے،اس زمانے میں کوئی حسب نسب نہیں دیکھتا،کوئی ذات برادری نہیں پوچھتا،کون کالاہے کون گوراہے اس سے کسی کوکوئی علاقہ نہیں ہے،البتہ کون...
  2. مفتی ناصرمظاہری

    داستان دبستاں

    حضرت مولانامفتی محمدنسیم لکھیم پوری ناصرالدین مظاہری (3) ہمارے کان خواہ مخواہ بڑے نہیں ہوئے اس میں حضرت مولانامفتی محمدنسیم اورحضرت مولانااطہرحسینؒ دونوں کی حصہ داری ہے،حضرت مفتی نسیم صاحب مدظلہ سبق کے دوران چاہتے تھے کہ طلبہ کی پوری توجہ سبق پرہی مرکوزرہے کبھی کبھی ایسا بھی ہوتاکہ ہم لوگوں...
  3. مفتی ناصرمظاہری

    داستان دبستاں

    حضرت مولانامفتی محمدنسیم لکھیم پوری(2) ناصرالدین مظاہری اتنے بڑے مدرسہ میں اپنی جماعت میں سب سے چھوٹامیں ہی تھا،یقین جانیں کچھ بھی پلے نہیں پڑتاتھا،جان توڑمحنت وکوشش کرتاتھا،یادکرنے اوررٹنے پربھرپورتوجہ دیتاتھا،کم عمری کے زورمیں سبق تویادہوجاتالیکن سمجھ میں نہیں آتاتھا،نہ آج کل کی طرح...
  4. مفتی ناصرمظاہری

    داستان دبستاں

    مدرسہ امدادالعلوم زیدپوربارہ بنکی میں داخلے کی کہانی(1) ناصرالدین مظاہری گیارہ سال کی عمرہی کیاہوتی ہے، ایسی کچی عمرمیں بھلاکون بچہ ہے جواپنی سب سے قیمتی اورجان سے زیادہ پیاری ’’ماں‘‘سے سیکڑوں کلو میٹردور قصبہ زیدپورضلع بارہ بنکی کے مدرسہ امدادالعلوم میں پڑھنے کی سوچے ،ہوایہ کہ اس مدرسہ کے...
  5. مفتی ناصرمظاہری

    داستان دبستاں

    میری تعلیم وتربیت میں حضرت مولانا حفظ الرحمن مدظلہ (خیری) کی ابتدائی کوششیں شامل ہیں،مولانا محمد عمرزیدپوری کی توجہات سامیہ،مفتی محمد نسیم لکھیم پوری کی کوثروتسنیم سے دھلی ہوئی باتیں، مفتی نظام الدین قاسمی بھاگلپوری کااندازتربیت، مولانامحمدسلیم قاسمی زیدپوری کے تفسیری نکات، مفتی محمدیعقوب بستوی...
  6. مفتی ناصرمظاہری

    داستان دبستاں

    *داستان دبستاں* میرا بچپن میرا مکتب: میرے زمانے میں لکڑی کی تختی چلتی تھی تختی کوسیاہ کرنے کےلئے ہم طاق کی تلاش میں رہتے تھے کیونکہ چراغ انہی طاقوں میں جلائے جاتے تھے، ایک چراغ پوری مسجد کومدھم روشنی فراہم کرتاتھا، ہم اپنی تختی پر طاق والی کالک خوب رگڑتے تھے اور نتیجہ میں ہمارے پہلے سے گندے...
  7. مفتی ناصرمظاہری

    بنیادکا پتھر

    سنو!سنو!! بنیادکا پتھر ناصرالدین مظاہری ۱۲؍محرم الحرام ۱۴۴۴ھ کہاوت مشہورہے ’’دنیاچڑھتے سورج کی پوجاکرتی ہے‘‘۔آپ نے بھی دیکھاہوگا کہ شاگرداپنے آپ کواپنے بڑے استاذ یا شیخ ومرشدکے نام سے منسوب کرتاہے،فارغین اپنے مکتب کاذکرنہیں کرتے بلکہ اپنے اُس ادارے کا ذکرکرتے ہیں جہاں سے اُسے ڈگری ملی...
  8. مفتی ناصرمظاہری

    حضرت مولانامحمودحسنی ندویؒ

    حضرت مولانامحمودحسنی ندویؒ ناصرالدین مظاہری زخموں پرمرہم رکھنے والے اس دنیامیں شایدوبایدہیں لیکن نمک پاشی کرنے والے تھوک کے بھاؤ ملتے ہیں،مثبت فکراورسوچ کے حاملین کوچراغ لے کرتلاش کرناپڑتاہے لیکن منفی سوچ رکھنے والے آپ کے گردونواح میں،آپ کے آزوبازومیں آپ کے دائیں بائیں آگے پیچھے بلکہ اب...
  9. مفتی ناصرمظاہری

    دیواروں کاناجائزاستعمال

    سنو!سنو!! دیواروں کاناجائزاستعمال ناصرالدین مظاہری اس نے بڑے چاؤ اورکثیرصرفہ سے اپنامکان بنوایاتھا،خوبصورت ٹائل اوردیدہ زیب نقاشی کرائی تھی ،ایک عرصہ تک اس کے مکان کی تعمیرجاری رھی تھی،کروڑوں کی لاگت اورصرفہ سے جب اس کامکان بن کرتیارہواتووہ بہت خوش تھا،دوردورسے لوگ اس کے مکان کودیکھنے...
  10. مفتی ناصرمظاہری

    مدرسہ امدادالعلوم زیدپوربارہ بنکی میں داخلے کی کہانی

    مدرسہ امدادالعلوم زیدپوربارہ بنکی میں داخلے کی کہانی ناصرالدین مظاہری گیارہ سال کی عمرہی کیاہوتی ہے، ایسی کچی عمرمیں بھلاکون بچہ ہے جواپنی سب سے قیمتی اورجان سے زیادہ پیاری ’’ماں‘‘سے سیکڑوں کلو میٹردور قصبہ زیدپورضلع بارہ بنکی کے مدرسہ امدادالعلوم میں پڑھنے کی سوچے ،ہوایہ کہ اس مدرسہ کے پڑھے...
Top