اداریہ :: روحانی بارش کا موسم پھر آگیا

'ماہنامہ افکار قاسمی شمارہ نمبر 8، 2013 ماہ رمضان ن' میں موضوعات آغاز کردہ از پیامبر, ‏جون 20, 2013۔

  1. پیامبر

    پیامبر وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,245
    موصول پسندیدگیاں:
    568
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    <div style="direction:rtl;"><TABLE border="1" width="800">
    <table border="1" width="600" align="center">
    <tr>
    <td style="text-align:center; font-size:36px; padding:20px;">
    روحانی بارش کا موسم پھر آگیا
    </td>
    </tr>

    <tr>
    <td style="text-align:center; font-size:26px; padding:20px;">
    احمد قاسمی
    </td>
    </tr>
    <tr>
    <td style="text-align:justify; font-size:22px; padding:20px;">
    چاند اپنے سفر کی گیارہ منزلیں طئے کر کے پھر وہیں آگیا جہاں آج سے ایک سال قبل تھا، روحانی بارش کا موسم پھر آگیا ، دلوں کی کھیتی پھر ہری ہو نے لگی ، رحمتوں کی گھٹائیں پھر جھم جھم بر سنے لگیں ، برکتوں کے کنول پھر کھلنے لگے ، عفو ومغفرت کے خزانے ایکبار پھر وقف عام ہو گئے ، جنت کا ٹکٹ پھر ارزاں ہو گیا ، آپ مسلمان ہیں اپنے کو مسلمان کہتے ہیں مسلمان کے گھر میں پیدا ہوئے مسلمان کا نام اور وضع رکھتے ہیں ۔ اپنے رب غفور کی بخششوں سے کیا خدا نخواستہ آپ فائدہ نہ اٹھائیں گے ۔پروردگار رحیم کریم کی ان فیاضیوں کو کیا۔ خدانخواستہ آپ اپنے حق میں بیکار رکھنے لگے؟
    موسم گل شباب پر ہے آپ وسط چمن میں ٹہل رہے ہیں آپ خوشبو کو روکنے کیلئے اپنی ناک پر مضبوط غلاف چڑھائے ہوئے ہیں ،اشرفیاں لٹ رہی ہیں اور آپ کی گود میں آآ کر گر رہی ہیں پھر آپ انہیں ہاتھ سے جھٹک کر اپنی کوڑیوں سے کھیلنے میں لگے ہیں ۔پختہ ہموار سڑک روشنی سے جگمگا رہی ہے پر آپ تنگ وتاریک نا ہموار پُر خار پگڈنڈیوں پر چل کر اپنے پیروں کو ہلکان کر رہے ہیں ۔رمضان کا ماہ مبارک اپنی تمام لذوں اور راحتوں ، مسرتوں اور فر حتوں کی دعوت آپ کو دے رہا ہے ،جنت کی نعمتیں اپنے کو آپ پر پیش کر رہی ہیں ،لطافتیں اور بارشیں خود آپ سے ہم آغوش ہو نے کو بڑھ رہی ہیں۔
    پھر آپ ہیں جو اپنی تجارت اپنی دکان داری اور اپنی ٹھیکیداری اپنی وکالت اپنی طبابت اپنی شاعری اپنی ماسٹری اپنی انسکپڑی اپنی منیجری اپنی تحصیلداری اپنی ڈپٹی کلکٹری کی دھن میں ایسے مست ہو رہے ہیں کہ ناک رکھتے ہیں مگر خوشبو کو اپنے اوپر حرام کر لیا ہے آنکھ رکھتے ہیں مگر روشنی سے محرومی اختیار کر لی ہے بیمار ہیں مگر روزآنہ دوا نہ کھانے کی قسم کھالی ہے نادانی بے عقلی نا عاقبت اندیشی بد قسمتی حرمان نصیبی کی اس سے بڑھ کر کیا اور کیا مثال ہو سکتی ہے؟ ۔(مولانا عبد الماجد دریا آبادی)
    آؤ شیفتگان سنت محمدیہ کہ ماہ مقدس آیا !
    کیا عجیب وہ جوش ومحویت ہے جب مسلمان دن بھر کی بھوک وپیاس کے بعد رات کو خدا کی یاد کیلئے کھڑا ہوجاتا ہے ۔اللہ اللہ وہ تکلیف جو راحت قلبی کا باعث ہو معتکف حرا بھی اسی طرح خدا کی یاد کیلئے کھڑا رہا ہے یہاں تک کہ اس کے پاؤں میں ورم آجاتا کہ خدا کی ہدایت کا شکریہ بجالائیں ۔پش شب کو جب عالم سنسان ہے اور دنیا کا ذرہ ذرہ خاموش اور محو خواب ہے آؤ شیفتگان راہ سنت محمدیہ ہم اپنے بستروں کو خالی کریںخدا کی تقدیس میں مشغول ہوںاور اس کی حمد وثنا کریں جس نے ظلمت کدہ عالم میں صرف ہم کو ایک ایسا چراغ دیا جس سے ہمارے قلوب منور ہوگئے ۔ مولانا ابو الحسن علی میاں ندوی رحمۃ اللہ علیہ
    </td>
    </tr>
    </table></div>
  2. خادمِ اولیاء

    خادمِ اولیاء وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    405
    موصول پسندیدگیاں:
    29
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    واہ واہ احسنت ، بہت خوب ماشاء اللہ مولانا۔
  3. شکیل یونس

    شکیل یونس وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    147
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    بہت مفید شکریہ
  4. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    سبحان اللہ

    زبردست ہے ۔ جزاک اللہ خیرا

اس صفحے کو مشتہر کریں