ارہرکی دال

'آپ کی شاعری' میں موضوعات آغاز کردہ از مفتی ناصرمظاہری, ‏نومبر 28, 2017۔

  1. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری میں نہیں مانتاکاغذپہ لکھاشجرہ نسب منتظم اعلی

    پیغامات:
    1,699
    موصول پسندیدگیاں:
    190
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    ارہرکی دال
    بتاؤں میں تمہیں کیونکر کہ ہے کیادال ارہرکی
    سجیدہ ہے،شکیلہ ہے،نفیسہ دال ارہرکی

    جوانان سعادت مندکھاتے روزوشب اسکو
    ہنرمندان دنیاکوبھلی ہے دال ارہرکی

    کبھی جوخواب میں دیکھیں تووہ دزدان یورپ بھی
    وہ آئیں بزم میں میری اورکھائیں دال ارہرکی

    وہ مسلم ہویاہندوہویاایرانی وتورانی
    ملے جودال ارہرکی ٹپکائیں رال ارہرکی

    مرچ لہسن مصالحے اورنمک یہ چارعنصرہیں
    کولمبس کونہیں ملتی کبھی بھی خاک ارہرکی

    ہوائیں جھوم جائیں اورفضائیں مسکرائیں جو
    توسمجھواِس گلی کوچے میں پکتی دال ارہرکی

    نصیبہ ور،سعادت منداورلوگ خوش قسمت
    خوشاقسمت جوہیں وہ پائیں ہردم دال ارہرکی

    سلیم احمد،نفیس حمد،شکیل احمد،رئیس احمد
    یہ سب وہ لوگ ہیں جن کوبھلی ہے دال ارہرکی

    میاں ناصرؔیہ جوتم نےلکھی ہے نظم اِک دَم ہی
    یہ برکت ہے یہ عظمت ہے سراسردال ارہرکی​
    Last edited: ‏نومبر 28, 2017
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,586
    موصول پسندیدگیاں:
    774
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    مفتی صاحب دوپہر کا قیلولہ فرما رہے تھے اللہ جانے کیا ہوا ؟
    یہ نظم ارہر کی دال کی آمد شروع ہو گئی ۔شانِ نزول کی تلاش ہے ۔داؤد علی سوچو!
    کونسی گھٹنا گھٹی؟
  3. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری میں نہیں مانتاکاغذپہ لکھاشجرہ نسب منتظم اعلی

    پیغامات:
    1,699
    موصول پسندیدگیاں:
    190
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    داؤدتوبچہ ہے یہ کام توشادی شدہ بلکہ شدہ شدہ لوگوں کے سوچنے کاکام ہے میراخیال ہے کہ جب نیندنہ آئے توکھانے پینے کے تصورات کویکجاکیجئے مرغن اورملین اشیأپردھیان دیجئے،تنوع سے بھرپور،خوشبوسے مالامال،حلاوت آمیز،اشتہاانگیز،قلب وروح میں اترجانے والی،افکارواوثان کارخ موڑدینے والی لکھنوی ڈشوں کے بارے میں اپنے خیالات کویکسوکرلیجئے اورپھردیکھئے یاتونیندآجائے گی یاشاعری مسلط ہوجائے گی
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری میں نہیں مانتاکاغذپہ لکھاشجرہ نسب منتظم اعلی

    پیغامات:
    1,699
    موصول پسندیدگیاں:
    190
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    سنبھالاہوش جب سے، سنتاآیااپنی امی سے
    بڑے لوگوں کوہردم سوجھتی ہے ،دال ارہرکی
    خموشی جب بھی چھائی دیکھی، میں نے اپنی امی پر
    وجہ معلوم ہوئی ان سے ،کہ پکتی دال ارہرکی
    مرے بھائی، مرے والداورمری بہنیں
    اچھلتی کودتی ہرسوکہ پکتی دال ارہرکی
    محلہ والے مجھ سے پوچھتے کیارازہے اِس کا
    تمہارے گھرمیں ہردم اورہمہ دم دال ارہرکی
    طفیلی بن کے بڈھے بھی ہمارے گھرمیں آدھمکیں
    انھیں معلوم ہوجب کہ یہاں ہے دال ارہرکی
    گلابی ہے ،عنابی ہے،طنابی اوراَصفربھی
    خدانے ہرصفت سے یوں نوازادال ارہرکی
    خموشی میں،مدہوشی میں ،جنون وکیف ومستی میں
    ہوئے مجنوں صفت وہ بھی جوکھائیں دال ارہرکی
    سجاوٹ میں ،بناوٹ میں، حلاوت میں ،طراوٹ میں
    بہررنگے کہ خواہی خورہمہ تن دال ارہرکی
    ارے ناصرؔ یہ جوتم نے لکھی ہے نظم ارہرکی
    یہ خواہش ہے ملے جنت میں ہرسودال ارہرکی​
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں