امامت کی ملازمت

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از محمدداؤدالرحمن علی, ‏فروری 11, 2018۔

  1. محمدداؤدالرحمن علی

    محمدداؤدالرحمن علی منتظم۔ أیده الله منتظم رکن افکارِ قاسمی

    پیغامات:
    6,172
    موصول پسندیدگیاں:
    1,669
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    امامت کی ملازمت

    نماز میں کچھ دیری تھی
    امام صاحب کا انتظار ہو رہا تھا ، جیسے ہی مسجد کی گھڑی نے ٹون بجائی ، مسجد کے داخلی گیٹ سے امام صاحب بھی تشریف لے آئے ، ان کے قدموں میں لڑکھڑاہٹ تھی اور پھر نماز کی تلاوت میں بھی رعشہ محسوس ہوا ۔۔۔ بار بار کی کھانسی سے لگا کہ شاید ان کی طبیعت ٹھیک نہیں ہے ۔۔ نماز کے بعد میں سلام کے لئے ان کی جانب بڑھا،

    "السلام علیکم"
    انہوں نے انتہائی محبت ہمیشہ کی طرح سلام میں پہل کی ، جیسے ہی میں نے مصافحہ کیا ایک جھٹکا سا لگا ، ان کے ہاتھ انتہائی گرم تھے ، اور وہ شدید بخار کی کیفیت میں بھی اپنے فرائض خوش اسلوبی سے سرانجام دے رہے تھے ، میں ان کے کمرے تک ان کے ساتھ چلتا گیا، خیر و عافیت دریافت کی تو ہمیشہ کی طرح وہ اللہ کا شکر ادا کرتے ہوئے بولے
    " بس کچھ بخار ہے باقی تو سب ٹھیک ہے "

    " پھر مولانا آپ گھر کیوں نہیں چلے جاتے ؟؟ کچھ دن آرام کرلیتے "

    میرے مشورے کے جواب میں انتہائی روہانسی لہجے میں گویا ہوئے

    "نہیں بھائی اجازت نہیں ملتی ، مسجد کی کمیٹی نے کہا ہے کہ متبادل دے دو تو چلے جا ؤ وگرنہ گزارہ کرو "

    مجھے بے پناہ دکھ محسوس ہوا ۔۔یہ صرف ایک واقعہ نہیں مساجد کے جس امام سے بھی آپ مل لیں قریب قریب ایک ہی صورت حال کا شکار نظر آئے گا۔۔

    جس مغربی معاشرے کو ہم گالیاں دیتے نہیں تھکتے ، جن کی بدبودار تہذیب ہمارے لئے باعث عار ہے وہی لوگ اپنے مذہبی پیشوا کو جس انداز سے نوازتے ہیں ہم دیکھ کر حیران رہ جائیں گے

    عیسائی کمیونٹی اپنے "پادری " کو ماہانہ 27 سوڈالر ( دو لاکھ 70 ہزار روپے) تنخواہ دیتے ہیں ، یہودی اپنے "ربی" کو ماہانہ تقریبا 12 ہزار ڈالرز ( 12لاکھ روپےماہانہ) سے نوازتے ہیں ، ہندو اپنے پنڈت کو ماہانہ ایک لاکھ روپے دیتے ہیں اور دیگر مذاہب کے لوگوں کا یہ رویہ صرف اپنے مذہب کی حد تک محدود نہیں ہے بلکہ وہ اقلیت کے ساتھ بھی ایسا ہی رویہ روا رکھتے ہیں ، ایک محدود اندازے کے مطابق امریکہ میں مسجد کے امام کو ماہانہ 25 سو ڈالر ( دو لاکھ پچاس ہزار روپے ) تنخواہ ملتی ہے ، جبکہ میڈیکل ، رہائش اور دیگر یوٹیلٹی بلز اس کے علاوہ ہیں ۔۔

    اب ذرا اپنے ملک کی تنخواہوں کا گراف دیکھ لیجئے اور پھر اندازہ لگائیے ہم کہاں کھڑے ہیں ؟؟
    بحیثیت قوم ہمارے ذہنوں میں یہ بات راسخ ہوچکی ہے کہ " مولوی " وہ مخلوق ہے جس کی ضروریات کا تعلق " توکل " کے ساتھ ہے ۔۔ بس اللہ کی ذات

    منقول
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں