بابے کی چوری

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از مولانانورالحسن انور, ‏مارچ 30, 2019۔

  1. مولانانورالحسن انور

    مولانانورالحسن انور رکن مجلس العلماء Staff Member رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    1,536
    موصول پسندیدگیاں:
    141
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    پرانےوقتوں کی بات ہےچار چور چوری کے ارادے سے نکلے را ت بھر پھرتے رہے کچھ نہ ملا واپس جانے لگے تو ایک حویلی سے گدھے کی آواز آٰی ا ن نے سوچا خالی ہاتھ کیا جانا ہے یہ گدھا ہی لے چلتے ہیں ایک چور اندر داخل ہوا اس نے دروازہ کھولدیا یہ سب اندر داخل ہوگے
    تو وہاں ایک بوڑھا سورہا تھا انہیں بہت غصہ آیا کہ اتنی بڑی حویلی اور اس میں صرف ایک بوڑھا اور گدھا ان نے مشورہ کیا کہ ہم بابا اٹھا کر لے جاتے ہیں ان نے چارپای سمیت بابے کو اٹھایا اور چلے گے
    صبح دیر تک بابا جی گھر نہین پہنچے تو بیٹوں کو پریشانی ہوی دیکھا تو حویلی میں بابا موجود نہیں تلاش کیامگر نہ مل سکے چپ کرکے بیٹھ گے تو اہل محلہ نے بابے کے متعلق پوچھنا شروع کردیا کھوجی کا انتظام کیا اور چوروں کے گاوں پہنچ گے نمبردار کو صورت حال بتای نمبردار اپنے گاوں کے اچھے برے سب کو جانتا تھا اس نے چوروں کو طلب کیا چوروں نے ساری صورت حال بتای کہ یہ چار بیٹے جوان ہیں مگر بابے کو حویلی مین تنہا سولا رکھا ہے چوروں نے کہا ہم نے بابا نہیں دینا اسے ہم اپنے باپ کی طرح سمھجتے ہیں ۔۔۔۔
    یہ بابے کی محبت میں نہیں لوگوں کے طعنوں کی وجہ سے آیے ہیں
    اگر بابا چاہے دوسو روپے ہمیں دو بابا لے جاو اس دور میں دوسو روپیہ بہت بڑی دولت سمھجی جاتی تھی نمبردار بھی سمھجہ گیا اس نے کہا روپے لاو بابا لے جاو وہ گاوں واپس گے اور لوگوں کو صورت حال بتای لوگوں نے روپے اکھٹے کرکے دیدے یہ چوروں کے پاس پہنچے انہیں رقم دی چوروں نے بابا جی کو بلایا وہ دوسو بابا کو دیکر کہا یہ آپ کے ہیں انہیں اپنی ضرورت میں خرچ کرلینا ۔۔۔۔۔ باباجی نے شکریہ ادا کیا اور اپنے بیٹوں کیساتھ چلدئے ۔۔۔۔
    ماں باپ بوڑھے ہو جائیں تو انہیں اس طرح تنہا نہیں چھوڑ دینا چاہے بڑھاپے میں انہیں زیادہ ضرورت ہوتی ہے یہ ہماری جنت ہیں اور ان سے بے وفائی دخول جھنم کا زریعہ ہے
    محمدداؤدالرحمن علی نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. محمدداؤدالرحمن علی

    محمدداؤدالرحمن علی منتظم۔ أیده الله منتظم رکن افکارِ قاسمی

    پیغامات:
    6,242
    موصول پسندیدگیاں:
    1,699
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اللہ پاک والدین کی خدمت کی توفیق عطا فرمائے،آمین ثم آمین
    مولانانورالحسن انور نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں