باتوں سے خوشبو آئے

'غور کریں' میں موضوعات آغاز کردہ از احمدقاسمی, ‏جون 28, 2015۔

  1. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,592
    موصول پسندیدگیاں:
    777
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    باتوں سے خوشبو آئے​
    دکھ انسان کے مرنے کا نہیں ہوتا بلکہ اپنائیت ، محبت اور خلوص کے رشتوں کے ٹوٹ جانے کا ہوتا ہے ۔
    کوئی گناہ لذت کیلئے نہ کرنا، کیونکہ لذت ختم ہو جائے گی گناہ باقی رہے گا اور کوئی نیکی تکلیف کی وجہ سے نہ چھوڑنا کیونکہ تکلیف ختم ہو جائے گی، نیکی باقی رہ جائے گی۔
    دوستی ،بھروسا،دل، رشتہ، وعدہ، پیار ،کبھی مت توڑنا، کیونکہ جب یہ ٹوٹ جاتے ہیں تو آواز نہیں آتی ،لیکن درد بہت ہوتا ہے۔
    شرم کی کشش حسن سے زیادہ ہوتی ہے۔
    اپنے خیالات کو اپنا جیل خانہ نہ بناو۔
    تاریخ کو یاد رکھنے کے بجائے تاریخ بنانے کی فکر کرنی چاہئے۔
    جس سے نفرت ہو اس کی خوبیاں نظر نہیں آتیں جس سے پیار ہو اس کی خامیاں نظر نہیں آتیں۔
    بیماری میں گناہ اس طرح جھڑتے ہیں ،جیسے پت جھڑ کے موسم میں پتے جھڑتے ہیں۔
    برے شخص سے دوستی کبھی نہیں کرنی چاہئے ،کیونکہ کوئلہ اگر جلتا ہوا ہو تو ہاتھ کو جلا دیتا ہے اور اگر ٹھنڈا ہو تو ہاتھ کو کالا کر دیتا ہے۔
    اپنے ارمانوں کے پاؤں اتنے مت پھیلاؤ کہ اس سے آپ کے چادر کی لمبائی کم لگنے لگے۔
    محمد نبیل خان اور محمدداؤدالرحمن علی .نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ماشاءاللہ۔ ۔÷ ۔ ۔ باتوں سے خوشبو آئے
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. مولانانورالحسن انور

    مولانانورالحسن انور رکن مجلس العلماء Staff Member رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    1,522
    موصول پسندیدگیاں:
    133
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ۔۔۔۔واقعی باتوں میں ۔۔۔ بھی خوشبو ہے لکھنے والے کے اخلاص میں بھی خوشبو ہے
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. مظاہری

    مظاہری نگران ای فتاوی ناظم ای فتاوی ٹیم ممبر

    پیغامات:
    211
    موصول پسندیدگیاں:
    202
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    عنوان نے پرانی فائلوں میں دبا ہوا اخگر لکھنوی کا ایک شعر یاد دلا دیا:
    اخگر سے نہیں عود سے خوش خلقی سیکھ
    جو تجھکو جلائے اسے خوشبو آئے؛
    اخگر، چنگاری، عود، صندل، اگر بتی جس سے بنتی ہے؛
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں