بیوی کی طرف سے الگ گھر کا مطالبہ

'اصلاح معاشرہ' میں موضوعات آغاز کردہ از احمدقاسمی, ‏ستمبر 11, 2011۔

  1. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,955
    موصول پسندیدگیاں:
    994
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    بیوی کی طرف سے الگ گھر کا مطالبہ
    س:........شوہر اپنی بیوی کی کفالت کس طرح کرے جبکہ کھانے اور پہننے میں کوئی کمی نہ رکھتا ہو .اس کے علاوہ تمام پیسے جو کہ ذاتی خرچ یعنی شوہر اور بیوی دونوں کے لئے ہوں وہ ہر وقت الماری میں رکھے رہتے ہیں اور شوہر یہ بھی کہتا ہو کہ جب کبھی بھی ضرورت ہو الماری سے لے لیا کرو اور خرچ کر لیا کرو.
    ج :..........بیوی کا نان ونفقہ شوہر کے ذمہ ہے اور آپ کی تحریر کے مطابق شوہر وہ کر رہا ہے اس کے بعد بیوی کو کیا شکایت ہے .
    س :......... کیا بیوی اپنے شوہر پر دباؤ ڈال سکتی ہے کہ مجھ کو الگ گھر لے کر دیں جبکہ شوہر کی حیثئت نہیں ہے اور اسکے علاوہ شوہر زیر تعلیم بھی ہے اور یہ بھی کہتا ہے کہ صبر کرو کچھ دن کے بعد سب ٹھیک ہو جائیگا .کیا ایسی صورت میں گھر لے کر دینا ضروری ہے اور گھر لینا ہی پڑ جائے

اس صفحے کو مشتہر کریں