تازہ غزل۔۔۔ تجھ سے پہلی سی وفا کون کرے گا۔۔۔ محمد ذیشان نصر

'بزمِ غزل' میں موضوعات آغاز کردہ از ذیشان نصر, ‏دسمبر 27, 2012۔

  1. ذیشان نصر

    ذیشان نصر ناظم۔ أیده الله ناظم

    پیغامات:
    634
    موصول پسندیدگیاں:
    28
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    السلام علیکم ! محفلین الغزالی !
    آج بلکہ ابھی ابھی ایک تازہ غزل وارد ہوئی ہے سوچا آپ کے پیشِ نظر کرتے چلیں۔۔۔
    سو عرض کیا ہے ۔۔۔ !

    تجھ سے پہلی سی وفا کون کرے گا
    بعد میرے یہ خطا کون کرے گا

    کس پہ ہو گی تری وہ مشقِ ستم اب
    ظلم تیرے یوں سہا کون کرے گا

    کر لیا ترک تعلق ،تجھے لیکن
    یاد سے میری جدا کون کرے گا

    جس طرح ٹوٹ کے چاہا تجھے ہم نے
    اس طرح پیار بھلا کون کرے گا

    کون رکھے گا مرے زخموں پہ مرہم
    دردِ الفت کی دوا کون کرے گا

    اب تو تاریک ہے آنگن مرے دل کا
    اس اندھیرے میں ضیا کون کرے گا

    ترکِ الفت نہیں اچھی یہ تو سوچو
    عہدِ الفت "وہ "وفا کون کرے گا

    مدتوں سے جو نصرؔ فرض تھا تجھ پر
    حقِ الفت "وہ"ادا کون کرے گا

    محمد ذیشان نصر
    27-12-2012​
  2. مولانانورالحسن انور

    مولانانورالحسن انور رکن مجلس العلماء Staff Member رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    1,537
    موصول پسندیدگیاں:
    144
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    مدتوں سے جو نصرؔ فرض تھا تجھ پر
    حقِ الفت "وہ"ادا کون کرے گا
  3. ذیشان نصر

    ذیشان نصر ناظم۔ أیده الله ناظم

    پیغامات:
    634
    موصول پسندیدگیاں:
    28
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    شکریہ مولانا صاحب
  4. مزمل شیخ بسمل

    مزمل شیخ بسمل وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    59
    موصول پسندیدگیاں:
    1
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    بہت عمدہ غزل ہے ذیشان۔ کیا بات ہے۔ واہ واہ۔
  5. ذیشان نصر

    ذیشان نصر ناظم۔ أیده الله ناظم

    پیغامات:
    634
    موصول پسندیدگیاں:
    28
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    شکریہ بسمل بھائی۔۔۔!
    اس پر آپ کی طرف سے اصلاح بھی درکار ہے ۔۔!
  6. مزمل شیخ بسمل

    مزمل شیخ بسمل وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    59
    موصول پسندیدگیاں:
    1
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ابھی آنلائن آیا تو استاد اعجاز عبید او یعقوب آسی کی اصلاح دیکھی۔ ماشا اللہ کافی و شافی اصلاح فرما چکے ہیں۔ اب اصلاح شدہ غزل یہاں لگادیں تاکہ سنورا روپ بزم غزل کی شان بن سکے۔ :)
  7. ذیشان نصر

    ذیشان نصر ناظم۔ أیده الله ناظم

    پیغامات:
    634
    موصول پسندیدگیاں:
    28
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    یہ لیجئے مزمل بھائی ۔۔۔ سنوارا ہوا روپ حاضر ہے ۔۔۔۔

    تجھ سے پہلی سی وفا کون کرے گا
    بعد میرے یہ خطا کون کرے گا

    کس پہ ہو گی تری وہ مشقِ ستم اب
    ظلم تیرے یوں سہا کون کرے گا

    ترکِ الفت نہیں اچھی یہ تو سوچو
    عہدِ الفت کو وفا کون کرے گا

    کر لیا ترک تعلق ،تجھے لیکن
    یاد سے میری جدا کون کرے گا

    جس طرح ٹوٹ کے چاہا تجھے ہم نے
    اس طرح پیار بھلا کون کرے گا

    کون رکھے گا مرے زخموں پہ مرہم
    دردِ الفت کی دوا کون کرے گا

    اب تو تاریک ہے آنگن مرے دل کا
    اس اندھیرے میں ضیا کون کرے گا

    مدتوں سے جو نصرؔ فرض ہے تجھ پر
    حقِ الفت وہ ادا کون کرے گا

    محمد ذیشان نصر
    27-12-2012​

اس صفحے کو مشتہر کریں