حضرت اصمعیؒ کا واقعہ

'حکایات' میں موضوعات آغاز کردہ از مفتی ناصرمظاہری, ‏دسمبر 4, 2012۔

  1. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری کامیابی توکام سے ہوگی نہ کہ حسن کلام سے ہوگی منتظم اعلی

    پیغامات:
    1,731
    موصول پسندیدگیاں:
    207
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    حضرت اصمعیؒ کا واقعہ
    حضرت اصمعیؒ کا واقعہ ہے کہ ایک سفر میں انہوں نے یہ آیت ایک بدوی کے سامنے پڑھی وفی السماء رزقکم وما توعدون بدوی نے کہا کہ پھر پڑھواُنہوں نے پھر پڑھ دیا وہ بولا کہ اللہ تعالیٰ تو فرماتا ہے کہ رزق آسمان میں ہے اور ہم لوگ رزق کو زمین میں ڈھونڈتے ہیںاس کے پاس یہی ایک اونٹ تھا جس سے گزراوقات کرتا تھا اسی وقت اس کو خیرات کردیااور جنگل کی طرف نکل گیا ،کئی برس بعد اس شخص کواصمعی ؒ نے خانۂ کعبہ کا طواف کرتے دیکھااس نے خود ان کو سلام کیاانہوں نے پہچانا نہیں پوچھاتو اس نے کہامیں وہی شخص ہوں جس کو تم نے یہ آیت سنا ئی تھی اللہ تعالیٰ تمہارا بھلا کرے مجھے تمام بکھیڑوںسے نجات دیدی ،میں جب سے بڑے اطمینان کی زندگی بسر کررہا ہوںپھر اس نے پوچھااس آیت کے بعد کچھ اوربھی ہے انہوں نے اس کے بعد کی آیت پڑھ دی فَوَرَبِّ السَّمَائِ وَالْاَرْضِ اِنَّہٗ لَحَقٌّ مِّثْلَ مَآاَنْتُمْ تَنْطِقُوْنَ سن کر ایک چیخ ماری کہ اللہ اکبریہ میرے خدا کو کس نے جھٹلایا تھا کہ اس کو قسم کھاکر جتلانا پڑا کہ میری بات سچی ہے ،ایسا کون ظالم ہوگا جو خدا کو سچا نہ سمجھتا ہوگا ،خدانے جو قسم کھائی تو معلوم ہوتا ہے کہ کوئی ایسا بھی ہے جو خداکے کہنے کو بھی بلا قسم کے سچا نہیں سمجھتا بس یہ کہہ کر ایک چیخ ماری اور چیخ کے ساتھ وہیں جان نکل گئی پھر ہمارے حضرت نے فرمایا کہ بہت لوگوں نے جانیںدی ہیں اللہ تعالیٰ کی محبت میں خوف میں شوق میں،چنانچہ اس اخیر وقت میں مولویوںیا درویشوںکی بات رکھ لی مولانا محمد حسین الہ آبادی نے ، انہوں نے اجمیر میں جان دیدی ،صوفی لوگ اس پر بڑا ناز کرتے ہیں کہ مولویوں میں بھی کسی نے اللہ کی محبت میں اس طرح جان دی ہے ،مولویو ں کو بس اعتراض ہی اعتراض آتے ہیں ۔ (حسن العزیز)
  2. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ی فَوَرَبِّ السَّمَائِ وَالْاَرْضِ اِنَّہٗ لَحَقٌّ مِّثْلَ مَآاَنْتُمْ تَنْطِقُوْنَ سن کر ایک چیخ ماری کہ اللہ اکبریہ میرے خدا کو کس نے جھٹلایا تھا کہ اس کو قسم کھاکر جتلانا پڑا کہ میری بات سچی ہے ،ایسا کون ظالم ہوگا جو خدا کو سچا نہ سمجھتا ہوگا ،خدانے جو قسم کھائی تو معلوم ہوتا ہے کہ کوئی ایسا بھی ہے جو خداکے کہنے کو بھی بلا قسم کے سچا نہیں سمجھتا بس یہ کہہ کر ایک چیخ ماری اور چیخ کے ساتھ وہیں جان نکل گئی
    سبحان اللہ سبحان اللہ سبحان اللہ​
  3. بنت حوا

    بنت حوا فعال رکن وی آئی پی ممبر

    پیغامات:
    4,572
    موصول پسندیدگیاں:
    458
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Pakistan
    سبحان اللہ سبحان اللہ سبحان اللہ
  4. محمد ارمغان

    محمد ارمغان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,661
    موصول پسندیدگیاں:
    106
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    مولیٰ! کیا شان ہے تیرے دوستوں اور محبوبین کی، آہ!۔۔۔
    وہ تو پا گئے جو پانا تھا، اور ہم قیدخانہ میں ہیں منتظر تیری صدا کے، ہم راضی ہیں تیری رضا پر۔
    سبحان اللہ والحمدللہ و لآ الہ الا اللہ و اللہ اکبر

اس صفحے کو مشتہر کریں