حیدرآباد تین بم دھماکوں سے دہل گیا

'حالات حاضرہ' میں موضوعات آغاز کردہ از حیدرآبادی, ‏فروری 21, 2013۔

  1. حیدرآبادی

    حیدرآبادی وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    53
    موصول پسندیدگیاں:
    9
    حیدرآباد (انڈیا) کے مشہور کاروباری علاقے "دلسکھ نگر" میں آج جمعرات 21/فبروری تین بم دھماکے پیش آئے۔ پہلا دھماکہ شام سات بجے (ہندوستانی مقامی وقت) ، اس کے پانچ منٹ بعد دوسرا اور پندرہ منٹ بعد تیسرا دھماکہ ہوا۔
    مصدقہ ذرائع کے مطابق 16 کے قریب افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔ وزیراعلیٰ کرن کمار ریڈی اور مئیر حیدرآباد ماجد حسین مقام واردات پر پہنچ گئے ہیں۔ مرکزی حکومت کی جانب سے نیشنل سیکوریٹی گارڈز کا ایک دستہ فوری طور پر حیدرآباد کو روانہ کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ یہ خصوصی دستہ بم دھماکوں کی تحقیقات اور تجزیے کا ماہر ہے۔
    دارالحکومت نئی دہلی اور پڑوسی شہر بنگلور جو آئی۔ٹی کا حامل مرکزی شہر ہے ، میں سیکوریٹی میں مزید اضافہ کر دیا گیا ہے۔

    حیدرآباد میں آج کے اس سانحے سے قبل دو مختلف مقامات پر متواتر دھماکے 25/اگست 2007 کو پیش آئے تھے۔

    تعمیر نیوز : Serial blasts rock Hyderabad
  2. راجہ صاحب

    راجہ صاحب وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    2,350
    موصول پسندیدگیاں:
    301
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    انااللہ وانا الیہ راجعون
  3. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,521
    موصول پسندیدگیاں:
    704
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    انااللہ وانا الیہ راجعون
  4. محمدداؤدالرحمن علی

    محمدداؤدالرحمن علی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ Staff Member منتظم اعلی رکن افکارِ قاسمی

    پیغامات:
    6,537
    موصول پسندیدگیاں:
    1,764
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    انااللہ وانا الیہ راجعون
  5. بنت حوا

    بنت حوا فعال رکن وی آئی پی ممبر

    پیغامات:
    4,470
    موصول پسندیدگیاں:
    409
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Pakistan
    انااللہ وانا الیہ راجعون
  6. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,867
    موصول پسندیدگیاں:
    912
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    انااللہ وانا الیہ راجعون
    حیدرآبادبم دھماکوں کی الغزالی فورم سخت سے سخت مذمت کرتا ہے اورمطالبہ کرتا ہے انسانیت دشمن خاطیوں کو سخت سے سخت سزا دی جائے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں