دوست تین طرح کے ہوتے ہیں

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از محمدداؤدالرحمن علی, ‏نومبر 30, 2019۔

  1. محمدداؤدالرحمن علی

    محمدداؤدالرحمن علی منتظم۔ أیده الله منتظم رکن افکارِ قاسمی

    پیغامات:
    6,263
    موصول پسندیدگیاں:
    1,703
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    *"دوست تین طرح کے ہوتے ہیں!"*

    ✍ شيخ *محمد بن صالح العثیمین* رحمه الله فرماتے ہیں کہ دوستوں کی *تین* قسمیں ہیں :

    ❶ *صديق منفعة :*
    *- جس کی دوستی صرف فائدے تک ہو -*

    اس کی دوستی تب تک ہوتی ہے جب تک وہ آپ کے مال اور منصب وغیرہ سے فائدہ اٹھا سکے. جب وہ فائدہ منقطع ہو گیا تو دوستی بھی ختم ؛ تو کون تو میں کون ؟! اور اکثریت انہی کی ہے ...
    آپ خود دیکھیے کہ آپ کی کسی سے گہری دوستی ہو. آپ کے خیال میں وہ آپ کا سب سے معزز دوست ہو اور آپ اس کے بہترین دوست ہوں. ایک دن وہ آپ سے پڑھنے کیلیے آپ کی کتاب مانگتا ہے. آپ کہتے ہیں کہ بھائی کل مجھے خود اس کتاب کی ضرورت ہے. اسی بات پر وہ آپ سے غصہ ہو جاتا ہے اور دشمنی پر اتر آتا ہے. کیا یہ آپ کا دوست ہے؟! نہیں، یہ فائدے کا دوست ہے.

    ❷ *صديق لذة :*
    *- جس کی دوستی محض موج مستی ہو -*

    ایسا دوست جس کی دوستی صرف وقت گزاری کیلیے ہے. گپ شپ، پیار محبت کی باتیں اور رَت جگے بس. نہ آپ کو کوئی فائدہ پہنچاتا ہے اور نا آپ اس سے کوئی فائدہ لے سکتے ہیں. یہ دوست وقت کا ضیاع ہے. اس سے بھی بچیں.

    ❸ *صديق فضيلة :*
    *- جس کی دوستی باعثِ شرف ہے -*

    جو آپ کو خوبصورت کام کرنے پر مجبور کرتا ہے، معیوب عادات سے روکتا ہے، آپ پر خیر کے دروازے کھولتا ہے اور خیر کی طرف رہنمائی کرتا ہے، اور اگر کبھی آپ پھسلنے لگیں تو آپ کو اس انداز سے تنبیہ کرتا ہے کہ آپ کی عزتِ نفس پر ذرا حرف نہ آئے ؛ یہ ہے جس کی دوستی باعثِ فضل ہے!

    *|[ شرح حلية طالب العلم : ١٠٢ ]|*

اس صفحے کو مشتہر کریں