شوق علم

'فقہاء ومحدثین' میں موضوعات آغاز کردہ از رجاء, ‏اکتوبر 22, 2011۔

  1. رجاء

    رجاء وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,198
    موصول پسندیدگیاں:
    8
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Pakistan
    حضرت امام ابو یوسف رحمہ اللہ سترہ سال تک امام اعظم رحمہ اللہ کی خدمت میں مسلسل حاضری دیتے رہے - حتی کہ ایک مرتبہ ان کے بچے کی وفات ہوگئی تو اس کے دفن میں بھی صرف اسلئے شریک نہیں ھوئے کہ امام اعظم رحمہ اللہ کی مجلس کی حاضری کا ناغہ نہ ھوجائے اور بچے کے کفن دفن کا انتظام اقرباء پر چھوڑدیا اور خود امام صاحب کی مجلس میں حاضر رہے -ابراہیم بن الجراح فرماتے ھیں کہ میں مرض وفات میں عیادت کے لئے حاضر ہوا تو اس وقت بھی علمی گفتگو تھی- کچھ دیر غشی رہی پھر افاقہ ھوا تو مجھ سے فرمانے لگے -ابراھیم سوار ھوکر رمی جمار کرنا افضل ھے یا پیدل -میں نے کہا کہ پیدل- فرمایا غلط - میں نے کہا سوار ھوکر -ابراھیم کہتے ھیں کہ میں اُٹھ کر دروازے تک ھی آیا تھا کہ ان کی وفات کی خبر سُن لی -یعنی مرتے دم تک علمی مشغلہ میں لگے رہے -
    ایک مرتبہ امام ابو یوسف رحمہ اللہ بیمار ھوئے تو حضرت امام اعظم ابو حنیفہ رحمہ اللہ ان کی عیادت کے لئے گئے - عیادت کے بعد باھر آکر فرمایا"اگر اس جوان کی وفات ھوگئی تو بہت بڑا علم ضائع ھوجائے گا -کیونکہ یہ زمین پر بسنے والوں میں سب سے بڑا عالم ھے " حضرت امام ابویوسف بڑے وبادت گزار بھی تھے-قاضی القضاۃ کی ذمہ داریوں کے باوجود روزانہ دو سو رکعت نماز نفل پڑھتے اور روزے بھی کثرت سے رکھتے تھے- آپ کی وفات 182ھ میں کوفہ میں ہوئی -
  2. سارہ خان

    سارہ خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,568
    موصول پسندیدگیاں:
    17
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Pakistan
    جزاک اللہ خیرا،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
  3. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    جزاک اللہ
    علم سے ہی انسان آسمان کی بلندی سے بھی اوپر پرواز کرتا یے

اس صفحے کو مشتہر کریں