غزل۔ الفت میں بھی ہم رکھتے ہیں معیار الگ

'بزمِ غزل' میں موضوعات آغاز کردہ از ذیشان نصر, ‏اپریل 20, 2012۔

  1. ذیشان نصر

    ذیشان نصر ناظم۔ أیده الله ناظم

    پیغامات:
    634
    موصول پسندیدگیاں:
    28
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اپنی ایک اور تازہ غزل پیش ہے

    الفت میں بھی ہم رکھتے ہیں معیار الگ
    اپنی چاہت کے ہیں سب افکار الگ

    اک شہرِ محبت ہے کوچۂِ دل میں
    ہیں خریدار الگ واں بازار الگ

    شایاں نہیں ہم کو یہ طور طریقے
    اظہارِ مودّت کے ہیں اقدار الگ

    انکارِ وفا کے بھی ہیں اور سلیقے
    اقرارِ محبت کے بھی اطوار الگ

    یوں تو چمن اور بھی ہیں دنیا میں مگر
    گلزارِ محبت کے ہیں انوار الگ

    ہیں زمانے میں حسیں گھر بار کئی پر
    کوچہ ِٔ جاناں کے درو دیوار الگ

    اہلِ محبت کی نہیں شان یہ ہرگز
    ہو گفتار الگ اور کردار الگ

    اندازِ بیاں گرچہ بہت خاص نہیں
    کہتے ہیں کہ ذیشاں کے ہیں اشعار الگ

    محمد ذیشان نصر​
  2. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,631
    موصول پسندیدگیاں:
    791
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    انکارِ وفا کے بھی ہیں اور سلیقے
    اقرارِ محبت کے بھی اطوار الگ

    بہت خوب
  3. سیفی خان

    سیفی خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4,553
    موصول پسندیدگیاں:
    72
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اہلِ محبت کی نہیں شان یہ ہرگز
    ہو گفتار الگ اور کردار الگ
    بے شک
  4. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ہیں زمانے میں حسیں گھر بار کئی پر
    کوچہ ِٔ جاناں کے درو دیوار الگ
    بہت خوب
  5. أضواء

    أضواء وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    2,522
    موصول پسندیدگیاں:
    23
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Saudi Arabia
    :->~~ :->~~ بہت خوب
  6. ذیشان نصر

    ذیشان نصر ناظم۔ أیده الله ناظم

    پیغامات:
    634
    موصول پسندیدگیاں:
    28
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    پسندیدگی کے لئے تمام احباب کا شکر گذار ہوں۔۔۔

اس صفحے کو مشتہر کریں