غیرمقلدین سے ضروری گزارش

'بحث ونظر' میں موضوعات آغاز کردہ از مفتی ناصرمظاہری, ‏جنوری 13, 2013۔

  1. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری کامیابی توکام سے ہوگی نہ کہ حسن کلام سے ہوگی منتظم اعلی

    پیغامات:
    1,731
    موصول پسندیدگیاں:
    207
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    [size=xx-large]غیرمقلدین سے ضروری گزارش​
    الغزالی سے جڑے تمام قارئین (جوجعلی ونقلی ناموں سے رکن بنے ہوئے ہیں اورجواصلی ناموں سے منسلک ہیں وہ بھی)توجہ فرمائیں۔
    مولانامفتی ابوالکلام صاحب قاسمی :کوالغزالی سے اسی لئے جوڑاگیاتھاتاکہ وہ صرف غیرمقلدین کے زیباونازیبااعتراضات واشکالات کے جوابات دیں ،لیکن نہایت افسوس کی بات ہے جس دن سے مفتی صاحب کی طرف سے اسی مضمون کاایک مختصراعلان الغزالی پرنشرکیاگیاتواس کے بعدسے یکسرسکوت اورمکمل خاموشی ہے۔خداراایسانہ کریں،اعتراضات کریں اورضرورکریں،بس اگرمہذب اندازمیں سوال کریں گے توممکن ہے جھولی مرادوں سے بھرجائے۔تہذیب کادامن نہ چھوڑیں اورخوب خوب سوالات کریں۔یہ پیغام مفتی صاحب ہی کی طرف سے کیاجارہاہے۔
    [/size]
  2. ناصرنعمان

    ناصرنعمان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    58
    موصول پسندیدگیاں:
    23
    جگہ:
    Akrotiri
    السلام علیکم ورحمتہ اللہ
    محترم مفتی صاحب ۔۔۔۔ الحمد للہ ہمارا تعلق احناف سے ہے ۔۔۔۔ اور ہمارے خیال میں یہ سلسلہ صرف غیر مقلدین کے لئے ہی نہیں ہونا چاہیے بلکہ اس سلسلہ سے ہمارے تمام احناف بھائی بہن بھی استفادہ حاصل کرسکتے ہیں ۔۔۔یعنی جیسا کہ غیر مقلدین آج کل انٹر نیٹ پر مختلف اشکالات کے ذریعہ معصوم لوگوں کے ذہن میں شبہات پیدا کرتے ہیں ۔۔۔۔ تو اُن کے سدباب کے لئے عام مسلمان کو بھی کسی بھی غیر مقلدین کی طرف سے پیش کردہ اعتراضات یا اشکالات کے جوابات کے لئے رجوع کرنا چاہیے
    اسی سلسلہ میں ایک سوال پیش خدمت ہے ۔۔۔ ہم نے ایک موقع پر شاہ ولی اللہ محدث دہلوی رحمہ اللہ کے (حجۃ اللہ البالغہ)حوالے سے ایک حدیث پیش کی تھی
    وثانیا قال رسول صلی اللہ علیہ وسلم اتبعوا السواءُ الاعظم ولمّاا اندرست المذاہب الحقہ الا ھذہ الاربعۃ کان اتبا عھا اتباعا للسواد الاعظم
    جس کے جواب میں یہ فرمایا گیا:
    یہ حدیث ضعیف ہے
    یہ وہ سندیں ہیں جو اس روایت کی ہیں
    - أخرجه الامام ابن ماجه فى سننه كتاب الفتن باب السواد الأعظم بهذا الاسناد
    حدثنا العباس بن عثمان الدمشقي قال : حدثنا الوليد بن مسلم قال : حدثنا معان بن رفاعة السلامي قال : حدثني أبو خلف الأعمى ، قال : سمعت أنس بن مالك ، يقول : سمعت رسول الله صلى الله عليه وسلم ، يقول : " إن أمتي لا تجتمع على ضلالة ، فإذا رأيتم اختلافا فعليكم بالسواد الأعظم "
    2- أخرجه ابن حميد فى سمنده بمسند أنس ابن مالك بلفظه بهذا الاسناد
    أنا يزيد بن هارون ، أنا بقية بن الوليد ، أنا معان بن رفاعة السلامي ، عن أبي خلف الأعمى ، عن أنس بن مالك
    3- ذكره ابن عاصم فى كتاب السنة بلفظه بهذا الاسناد
    ثنا محمد بن مصفى ، ثنا أبو المغيرة ، عن معان بن رفاعة ، عن أبي خلف الأعمى ، عن أنس بن مالك
    ان تمام اسناد یں ایک شخص ہے ’’معان بن رفاعۃ‘‘
    حافظ ابن حجر عسقلانی رحمہ اللہ نے ان کے بارے میں تقریب میں فرمایا ہے کہ ’لین الحدیث ہے، کثرت سے مرسل بیان کرتا ہے.
    اور پھر اس سند میں ’’ابوخلف الاعمی‘‘ بھی ہے جس کے بارے میں حافظ ابن حجر العسقلانی رحمہ اللہ نے فرمایا: ’’متروک الحدیث ہے۔‘‘
    اور ابن معین نے اسے کذاب کہا ہے

    اگر مہربانی فرما کر اس کی وضاحت ہوجائے تو عنایت ہوگی۔جزاک اللہ
  3. qureshi

    qureshi وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    292
    موصول پسندیدگیاں:
    209
    جگہ:
    Afghanistan
    حضرت اگر یہ اعلان اگر اہلحدیث کے فورم پر کیا جائے،اور ادھر انکو اعتراض پر جواب دیے جائے تو زیادہ بہتر رہے گا
    دوسرا اہلحدیث کے کچھ ماہنامے نکلتے ہیں جیسے ھافظ علی زئی صاحب کے اور دیگر جگہوں سے،تو ان میں دیے گئے اعتراضات کا جواب “ القاسمی“ میں دیا جائے۔
    کیونکہ پروپگنڈا سارا تو وہ اپنے فورم پر کررہئے ہیں۔
  4. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    افکار قاسمی میں ان کے ماہناموں کا جواب دیا جا سکتا ہے اور ایسا سلسلہ شروع ہو جائے تو اچھا قدم ہے
  5. ناصرنعمان

    ناصرنعمان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    58
    موصول پسندیدگیاں:
    23
    جگہ:
    Akrotiri
    السلام علیکم ورحمتہ اللہ
    کیا کوئی بھائی شاہ ولی اللہ رحمہ اللہ کی ایک عبارت کے اردو ترجمہ کی وضاحت کرسکتا ہے
    جو نیچے دیا گیا ہے
    [​IMG]
    حجتہ اللہ کی اصل عربی متن درج ذیل ہے جس میں صفحہ نمبر 3 پر وہ عبارت ہے جس کا اوپر اردو ترجمہ پیش کیا گیا ہے
    [​IMG]
    [​IMG]
    [​IMG]
    جواب کے منتظر
    ناصر نعمان
  6. ناصرنعمان

    ناصرنعمان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    58
    موصول پسندیدگیاں:
    23
    جگہ:
    Akrotiri
    ہمیں اوپر پیش کردہ اردو ترجمہ کی حقیقت یہ سمجھ آرہی ہے کہ پہلے صفحہ میں شاہ صاحب رحمہ اللہ ابن حزم کی تقریر لکھ کر اُن کی غلط فہمیاں واضح فرمارہے ہیں
    اسی طرح تیسرے صفحہ میں لفظ “فیمن“ جس کا ترجمہ مترجم نے “ابن حزم کی تقریر اُس شخص کے حق میں درست ہے“ کرکے یہ ظاہر کیا ہے کہ یہ شاہ صاحب کا موقف ہے ۔۔۔۔ اسی طرح اگلے جملے (حنفی ہو کر شافعی سے فتوی دریافت کرنے کو جائز نہ سمجھنا) میں بھی لفظ “فیمن“ کا ترجمہ یہی “ابن حزم کی تقریر اُس شخص کے حق میں درست ہے“ کیا ہے ۔۔۔۔ جبکہ ہمیں یہ سمجھ آرہا ہے کہ شاہ صاحب یہاں ابن حزم کی غلط فہمی لکھ کر آگے اس کی وضاحت فرمانا چاہتے ہیں ۔۔۔جس کی نشادہی تیسرے صفحہ میں اس نشان(1) سے ہورہی ہے ۔۔۔۔ جس کی وضاحت نیچے “ای قول ابن حزم“ سے کی گئی ہے۔
    کیا ہمارا یہ سمجھنا درست ہے ؟؟؟
  7. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری کامیابی توکام سے ہوگی نہ کہ حسن کلام سے ہوگی منتظم اعلی

    پیغامات:
    1,731
    موصول پسندیدگیاں:
    207
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    ناصرنعمان،قریشی اورنبیل صاحبان!
    مجھے مذکورہ سوال کی خبرنہ ہوسکی اس لئے انتظارکی زحمت اٹطانی پڑی۔بہرحال میں نے سوال کاپرنٹ مفتی ابوالکلام صاحب کوبھیج دیاہے وہ ابھی ششماہی امتحان میں مصروف ہیں فراغت پرجواب دیں گے جس کونشرکردیاجائے گا۔اس کے لئے معذرت طلب ۔۔۔۔ناصر
  8. محمدداؤدالرحمن علی

    محمدداؤدالرحمن علی منتظم۔ أیده الله Staff Member منتظم رکن افکارِ قاسمی

    پیغامات:
    6,291
    موصول پسندیدگیاں:
    1,708
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    @[مفتی ناصرمظاہری] صاحب کب تک جوابات موصول ہونگے

اس صفحے کو مشتہر کریں