غیر مقلدین اور جانور

'دیگر ادیان، مذاہب و مسالک' میں موضوعات آغاز کردہ از خادمِ اولیاء, ‏دسمبر 21, 2011۔

  1. خادمِ اولیاء

    خادمِ اولیاء وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    405
    موصول پسندیدگیاں:
    29
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    فیصلہ آپ خود کریں کہ جانوروں اور انسانوں میں کوئی فرق ہے؟

    1۔ مرد اور خنزیر کے بال، پٹھے، ھڈیاں پاک ہیں۔ کنز الحقائق ص13

    2۔ روٹی کے درمیان میں چوہے کی بیٹ ہو تو کھانا حلال ہے۔ کنز الحقائق ص232

    3۔ حلال جانور کا ہر جزء حلال ہے(آنتیں، آلہ تناسل، کپورے، دبر) فتاوی نذیریہ ج3ص320

    4۔ اونٹ، گائے، بکری کے پیشاب کی ملت کا اعتقاد رکھنا چاہیے۔ فتاوی ثنائیہ ج2ص67

    5۔ ایسے جانور کا گوبر یا پیشاب ہو جو جائز ہے۔ اس جگہ نماز پڑھنی جائز ہے۔ محمدى زیور ص 19

    6۔ گوہ اور بچو کھانا جائز ہے۔ محمدی زیور ص379

    7۔ دریا کا ہر جانور ( مگرمچھ، دریائی گھوڑا، دریائی خنزیر)اﷲ نے انسان کےلئے جائز کر دیا۔ محمدی زیور ص377

    8۔ ماکول اللھم (جن جانوروں کا گوشت کھایا جاتا ہے) کا بول وبراز (پیشاب اور پاخانہ) عند الشرع پاک ہیں۔فتاوی ستارىہ ص105

    9۔چھوٹی گدھ، بڑی گدھ، کوا، سارس، چمگاڈر، ھد ھد، طوطا، لمبے بازوں والا اور چھوٹی ٹانگوں والا سیاہ پرندہ، سنہ، گوہ حلال ہیں۔کنز الحقائق ص168

    10۔ الو حلال ہے۔ الحیات بعد الممات ص75

    11۔دریائی جانور حلال ہے۔ فتاوی رفیقیہ ج 1ص 16

    12۔حلال اور حرام سب جانوروں کا دودھ پاک ہے۔بدور اہلہ ص18

    13۔کتے کے پیشاب کی نجاست پر کوئی دلیل نہیں۔ نزل الابرار ج1ص 50

    14۔جن جانوروں کا گوشت کھایا جاتا ہے اور جن کا گوشت نہیں کھایا جاتا سب کا پیشاب پا ک ہے۔ نزل الابرار ج 1ص49

    15۔کتے اور خنزیر کے پلید ہونے کا دعوی ٹھیک نہیں (پاک ہیں)عرف الجادی ص10

    16۔ تمام جانوروں کا پیشاب پاخانہ پاک ہیں۔ بدور اہلہ ص15
  2. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اناللہ وانا الیہ راجعون
  3. اصلی حنفی

    اصلی حنفی وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    139
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    برادر بہت سارے حوالے اکھٹے کردیئے اور بہت محنت بھی کی ہوگی ان حوالوں کو اکھٹا کرنے اور پھر لکھنے میں اور کافی وقت بھی صرف کیا ہوگا۔
    لیکن برادر آپ اگر غیر مقلدین (اہل حدیث) کے اصولوں پر نظر رکھ کر بات کرتے تو پھر شاید اتنی ساری مشقت آپ کو نہ اٹھانا پڑتی
    میں مزید اس پر بحث نہیں کرونگا اور نہ ہی میں بحث کا اہل ہوں پر ایک بات کہنے تھی وہ کہہ دی
    ہاں آپ کے ذہن میں یہ بات ڈالتا چلوں کہ اہل حدیث کے دو اصول ہیں
    اطيعوا الله واطيعوالرسول
    جو بھی بات کرنی ہو ان کی روشنی میں کیا کریں ۔کیونکہ اہل الحدیث کا صاف دعویٰ ہے کہ وہ اپنے علماء کی قدرکرتے ہیں لیکن تقلید نہیں اور وہ ہر وہ بات مانتے ہیں جو صحیح ثابت ہو
    اس لیے اہل حدیث پر بات کرنے سے پہلے آپ اصولوں پر ایک نظر کرلیا کریں تو بہت ساری مشکلات حل ہوجائیں گیں
    اللہ ہی سے ہدایت کا سوال ہے
    والسلام
  4. شرر

    شرر وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    95
    موصول پسندیدگیاں:
    2
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
  5. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    واہ سبحان اللہ اصول با کمال اور عمل بے کمال ۔
  6. نورالاسلام

    نورالاسلام وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    150
    موصول پسندیدگیاں:
    1
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    یعنی جب پاؤں گردن پے آ گیا تو اصول یاد آ گئے اور جب گردن آزاد ہوئی تو اپنے آزاد عقائد کا اظہار کردیا ۔ بہت خوب جناب ۔

    خرد کا نام جنوں رکھ دیا جنوں کا خرد
    جو چاہے آپ کا حسن کرشمہ ساز کرے

اس صفحے کو مشتہر کریں