غیر مقلدین کی ہذیان سرائی کا جواب

'بحث ونظر' میں موضوعات آغاز کردہ از شرر, ‏نومبر 15, 2011۔

  1. شرر

    شرر رکن مجلس العلماء رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    97
    موصول پسندیدگیاں:
    5
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    [align=center]غیر مقلدین کی ہذیان سرائی کا جواب​

    مولوی رحیم بخش پنجابی غیر مقلد کا ایک شعر اور اسکے بعد احقر کا جواب ملاحظہ کیجئے

    ہمارے ،منہ نہ لگ اے لعنتی ، بدکار بد مذہب
    زمانہ پر عیاں ہے اب ترا کردار بد مذہب

    کبھی اک حال پر چین وقرار آتا نہیں تجھ کو
    کبھی اس پار بد مذہب کبھی اُس پار بد مذہب

    کبھی اپنا بناتے ہو اماموں کو، کبھی دشمن
    کبھی انکار کرتے ہو کبھی اقرار بد مذہب

    ہو تم اسلاف سے بیزار لیکن نام سلفی ہے
    پرا گندہ تمہارے ہیں بہت افکار بد مذہب

    کیا ہے بے حیا تقلید کے انکار نے ان کو
    کہ ہر دم افترا کرنے کو ہیں تیار بد مذہب

    پرستش کر رہے ہیں افتراء وکذب کی ہر دم
    گلے میں گمرہی کا ڈال کر زنار بد مذہب

    ہے عین دین ان کا افترا وکذب وفتنہ ،شر
    بھلا کیوں کر نہ پھیلائیں گے شر ہر بار بد مذہب

    پڑے ہیں نشہ آوارگی میں مست ولایعقل
    اچھالا کرتے ہیں اسلاف کے دستار بد مذہب

    فساد وفتنہ وبد گوئی ہے بے شک خمیر ان کا
    نہ مانیں گے کبھی حق، فاجرو بدکار بد مذہب

    قسم ہے بد زبانی ۔بد گمانی ان کی فطرت ہے
    خباثت میں ہیں شیطانوں کے بھی سردار بد مذہب

    پُجاری شرکے۔ انگریزوں کے زیر سایہ پروردہ
    سدا حق سے رہے ہیں بر سر پیکار بد مذہب

    جب اپنے مولوی کی رات دن تقلید کرتے ہو
    تو کیوں اسلاف کی تقلید کا انکار بد مذہب

    نمازی ہیں نہ ڈاڑھی ہے نہ دینی کام کرتے ہیں
    مگر پکے موحد ، جنتی ،دیں دار بد مذہب

    طلاقیں تین دے کر بھی یہ رکھ لیتے ہیں عورت کو
    زنا کاری کیا کرتے ہیں یہ بد کار بد مذہب

    تمہاری سادگی نے کر دیا لوگو!جری ان کو
    شریعت پر بھی اب کرنے لگے یلغار بد مذہب

    زنا سے جو کمائے مال''رنڈی''پاک وطیب ہے
    ہے عبد اللہ غازی پوری گوہر بار بد مذہب

    رسول پاک کی وہ لاڈلی صدیقہ اطہر
    کیا مشکوک افسو س ان کا بھی کردار بد مذہب

    مرادِ مصطفےٰ کو بھی نہیں بخشا غضب تم نے
    چلے گی دیکھنا فاروق کی تلوار بد مذہب

    عمر فاروق احکام شریعت پر نہ چلتے تھے
    ''سیاست کرتے تھے''کہتے ہیں یہ غدار بد مذہب

    صحابہ دین کے احکام سے غافل معاذ اللہ
    علومِ دیں کے یہ''سلفی'' ہیں ٹھیکے دار بد مذہب

    وہ ذی النورین داماد رسول اللہ تھے عثمان
    علی شیرِخدا تھے حیدرِکرار بد مذہب

    ہیں سردارانِ جنت ذی حشم حَسنین سے نالاں
    لٹا ڈالا جنہوں نے دین پر گھر بار بد مذہب

    مغیرہ ابن شعبہ ، عمرو،سمرہ ابن جندب بھی
    علیٰ الاعلان لکھتے ہیں انہیں بدکار بد مذہب

    تھے باغی حضرت ابن ابی سفیان کہتے ہیں
    ابو ذر کے بھی ہیں دشمن بڑے مکار بد مذہب

    نہیں پیدا ہوا کوئی محقق بطن مادر سے
    اگر ہے ابتدا تقلید،کیوں انکار بد مذہب

    خدا کی ،دین وقرآن کی، فرشتوں کی،رسولوں کی
    صحابہ کی ہے تم پر لعنت وپھٹکار بد مذہب

    جاری ہے
    [/align]
  2. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    انا للہ وانا الیہ راجعون
  3. پیامبر

    پیامبر خوش آمدید مہمان گرامی

    واہ شرر صاحب...! آپ نے مذمت کرتے ہوئے ان کی ایک تاریخ بیان کردی. اللہ سب کو ہدایت دے.
  4. مائل شبلی

    مائل شبلی وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    9
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    جگہ:
    Pakistan
    [size=x-large]اگر ایسی پوسٹیں بھی شکریہ کی مستحق ہوسکتی ہیں تو کیوں نہ ہم شکریہ کے معانی اوراس کا محل استعمال بدلنے پر غور کرلیں .بہت ہی عجیب بات ہے ،مسلمانوں کے درمیان منافرت پھیلانے والی یہ پوسٹ بھی مفید ہوسکتی ہے؟لوگ پتھر کی طرح جامد کیوں ہو چکے ہیں ؟کیاحالات نے لوگوں کی قوت برادشت چھین لی ہے؟لوگوں کی زبانیں کیوں آوارہ ہو چکی ہیں ؟سب وشتم ،گالی گلوچ دشنام طرازی .بازاری زبان کا استعمال شاید کچھ لوگوں کے اپنے کردار اور ایمان کا تقاضاہومگر نبوی اخلاق سے اس کا دور کا بھی واسطہ نہیں .لایجرمنکم شنان قوم علی الا تعدلوا اعدلو شاید کہ اس کے مخاطب ابھی پید ا نہیں ہوئے.اتنا کرو جتنا کل جواب دے سکو .پہلے ایک فیصلہ ہوناجانا چاہیے .اہل حدیث مسلمان ہے یا کافر ؟کچھ لوگوں کے نزدیک گمراہ ہی سہی مسلمان تو ہے ایک مسلمان پر لعنت کرنا کیا قرآن کے اکتیسویں پارے میں آیاہے؟؟؟تعجب بالائے تعجب کیا خدا رسول فرشتے اصحاب اورقرآن بھی اس خلاف شرع فعل میں حلقہء متقلدین کے ہمنوا ہیں ؟؟گویا اس کو عرشی سند مل گئی .شرر میں کیا شر کے علاوہ بھی کچھ پایا جاتاہے؟ اس فورم کے اہل علم کہاں ہیں ؟؟؟؟؟[/size]
  5. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    مائل شبلی صاحب میرے نزدیک تو ہر کلمہ گو مسلمان ہے۔ چاہے وہ دیوبندی، بریلوی یا اہلحدیث ہو۔
    بھائی میں کیوں کسی کو کافر کہوں ہوسکتا ہے دوسرے مسلک والا غلط ہو اور میں صحیح لیکن وہ حق پر آجائے اور خدانخواستہ میں راہ مستقیم سے ہٹا دیا جاؤں۔
  6. سیفی خان

    سیفی خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4,553
    موصول پسندیدگیاں:
    72
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اللہ ہم سب کو ہدایت دے اٰمین
  7. نعیم

    نعیم وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    78
    موصول پسندیدگیاں:
    2
    جگہ:
    Afghanistan
    مائل شبلی صاحب
    اگر آئنہ دکھانا اخلاقیات کا خون ہےتو دریا برد کر دیجئے ان ساری کتابوں کو
    جو اسلاف نے مسالک کے تعاقب میں لکھیں ،جلا دیجئے ان کتب خانوں کو
    جہاں ایسی کتب موجود ہیں۔اگر حقیقت حال کی نشاندہی کرنا ہی شرر کا شرر ہے
    تو کاٹ لیجئے ان زبانوں کو جو حق کیلئے وا ہوئیں ۔قطع کردیجئے ان انگلیوں کو جن کی
    حرکت سے جہالت شرک وبدعت میں ڈوبتی نیا کو صراط مستقیم کا ساحل ملا۔
    خدا را انصاف سے کام لیجئے ۔اور حقیقت کو حقیقت کہنے پر زبان نہ پکڑیئے۔
    اصلاح مطلوب ہے تو جانبین کی پوسٹ کا تجزیہ کیجئے ۔
  8. مائل شبلی

    مائل شبلی وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    9
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    جگہ:
    Pakistan
    بصداحترامات
    مائل کتنا انجان ہے اس سے مجھے آپ کی پوسٹ نے آگاہ کیا ،آج مجھے پتہ چلا کہ میں اردوسے بھی ناواقف ہوں ،کیا یہ عجیب بات نہیں کہ اتنا عرصہ کتابوں کا ساتھ رہنے کے باوجود میں یہ نہ جان سکا کہ آئینہ دکھانے کا مطلب سب وشتم لعنت ملامت گالی گلوچ اور بدزبانی ہے.
    یہ کون لوگ ہیں کرتے ہیں گفتگوکیسی
    میں آپ کا شکرگذار ہوں نعیم بھائی میری غلطی پر آپ نے مجھے متنبہ کیا اورمیری اصلاح فرمانی
    اورتو اور بندہ پرورمیں یہ بھی نہیں جانتا تھا کہ مسالک کے تعاقب میں اسلاف مسلمانوں پر لعنت کرتے رہے ہیں.
    مائل کتناجاہل نکلا؟؟
    یہ خبر بھی مجھے آج ہی ملی ہے کہ بزرگوں نے صراط مستقیم کا ساحل دلوں میں نفرت کا بیج بو کر اورمسلمانوں پر لعنت کرکے دکھایاہے.
    مائل کی جہالت کا اس سے بڑاثبوت اورکیا ہوسکتاہےمیرے گرامی منزلت بھائی؟؟؟؟
    آج ہی مجھے یہ پتا چلا کہ وجادلھم بالتی ھی احسن کا مستحق ابوجہل اورقولالہ قولالیناکا مستحق فرعون تھا،گمراہ مسلمان نہیں
    بولنے والے کی زبان کیا پکڑی جاسکتی ہے؟بولنے والاتونعیم بھائی بول جاتاہے مگر لفظوں کی خطا قوموں کو بھگتنا پڑجاتی ہے لمحوں کی غلطی صدیوں کی سزا بن جاتی ہے
    مجھے یہ علم نہیں کہ بولنے کا مقصد اصلاح احوال ہے یا قدرت اظہاردکھانا امید کرتاہو ں پہلے کی طرح آپ اب بھی آگہی دینے سے دریغ نہیں فرمائیں
    آپ نے ایک بڑی حقیقت کی نقاب کشائی کی ہے اہل حدیث کو زانی بدکار کہنا اورانہیں اصحاب وملائک یہاں تک کہ اللہ رسول کی رحمت سے محرومی کی دعا دینا ہی اصل حقیقت ہے.
    میں کہتاہوں آپ کی زبانیں آگ اگلتی رہیں اور آپ کے قلم اسی طرح شعلے برساتے رہیں
    اللہ کرے زور قلم اورزیادہ
    اس سے اسلام پھیلے گا،مسلمانوں کا امیج بہترہوگاان کی روحانی ترقی کا گراف بلند گا اورپوری دنیا میں اس فورم کے وزیٹرز ثواب دارین حاصل کریں گے
    یہ دعا ہے کہ نہیں ہے فیصلہ آپ ہی فرمائیں گے
  9. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    برادر محترم آُپنے فرمایا کہ کیا ایسے مراسلہ جات بھی شکریہ کے مستحق ہیں تو میں نے صرف انکے مراسلے کا شکریہ ادا کیا تھا تحریر کا جواب میں نے اناللہ پڑھکر دیا تھا۔
    جناب والا جاہل خادم کی توجہ دلانے پر تمام صاحبان علم یہاں جمع ہورہے ہیں۔ انشاءاللہ عنقریب شرر صاحب سے وضاحت طلب کرلی جائیگی اور پھر آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔ میرے استاذ محترم آپ ہماری اصلاح کرتے رہیں وگرنہ گمراہی کے گڑھے میں گرنے کا اندیشہ ہے۔
  10. بدرجی

    بدرجی وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    68
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اسد بھائی خادم ہوتوآپ جیسا آپ نے کما ل کردیاویسے میں سوچ رہاتھا کہ اپنے شررصاحب نے کافی زیادتی کردی ان کے ساتھ مگر مائل شبلی صاحب نے بھی گردن شررپر ہاتھ رکھ کر ایک بڑے الزام سے احناف کوبچالیا
    غیرمقلدین کی بدزبانی ان کے لیے اورہمارے اخلاق ہمارے لیے
    ویسے بھی یہ طرز سخن جو شررصاحب کا ہے اپنی وقعت کھوچکا ہے اورچند اہالی موالیوں کے علاوہ اسے کوئی بھی پسند نہیں کرتا اورہمارے علماء احنا ف نے بھی ہمیشہ اینٹ کا جواب پتھر سے دیا مگراخلاق کا دامن ہاتھ سے نہ چھوڑااورنہ اپنے دہن کو ایسی گفتگوسے آلودہ کیایہ فرقہ توبے ادب ہے مگر ہمیں توادب سکھایا جاتاہے گالیاں نہیں
    سیدھا سادھا بندہ کہہ دے کہ بھائی یہ لوگ اجماع کے مخالف ہیں اوران کا راستہ جمہورامت سے علیحدہ ہے باقی ترک تقلید کوئی ایسی برائی نہیں کہ اس کے وجہ سے ہم ان پر لعنت کرنے لگیں
    یہ اچھی بات ہے کہ آپ نے اس کا نوٹس لیا آئندہ کے لیے اس کا سدباب ضروری ہے اس سے فورم کی عزت وتوقیر بھی کم ہوتی ہے
  11. پیامبر

    پیامبر خوش آمدید مہمان گرامی

    مائل شبلی، اللہ آپ کو جزائے خیر دے۔ آپ کی بات دل کو لگی ہے۔
  12. شرر

    شرر رکن مجلس العلماء رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    97
    موصول پسندیدگیاں:
    5
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    جناب من ایک تو مصروفیات نے اس طرح مجھے گھیرا ہے کہ واقعی معنیٰ میں سر کھجانے کی فر صت نہیں ۔ الغزالی کی طرف سے دی گئی ذمہ داریوں کو بھی پورا نہیں کر پارہا ہوں ۔ دوسرے آنجناب کا حدود اربعہ میرے احاطہ علم سے خارج ہے ایسے میں آپ کی تحریر کا تفصیلی جواب تو نہیں دے سکتا ۔مختصرا عرض کرتا ہوں
    قرآن کی آیت پیش کر کے گویا آپ نے کہا ہے کہ قوم ( احناف خصوصا اور مالکیہ ،شافعیہ وحنابلہ عموما) کی طرف داری اور بیجا حمایت کا گناہ صادر ہوا ہے انصاف سے کام لیا جائے ۔ موصوف من آپ نے پڑھا ہوگا نظم کا عنوان ہے '' غیر مقلدوں کی ہذیاں سرائی کا جواب'' اسکے بعد ایک غیر مقلد کا شعر ہے جس میں شاعر نے امت کے سواد اعظم یعنی مسلمانان ہند وپاک ،بنگلہ دیش وافغانستان ( جہاں احناف کی اکثریت ہے ) اور تمام بلاد اسلامیہ (جہاں مالکیہ ،شافعیہ وحنابلہ کی کثرت ہے)کے گلے میں تقلید کا زنار (وہ دھاگہ یا ڈوری جو ہندو لوگ باندھے رہتے ہیں )ڈالا ہے ان کے بد مذہب ہو نے کا ہتھ گولہ داغا ہے مشرک بنایا اور جھوٹا کہا ہے ۔احقر نے اسی کا جواب لکھا ہے ۔ ناراضی کیوں؟
    قبلہ محترم اگر آپ اس فرقے کے حامی نہیں تو میں آپ سے معذرت خواہ ہوں ۔مگر ادبا ایک التماس کروں گا کہ ہمارے مخالف ٹولے کیلئے انصاف وشرافت اور اخلاق وآداب کے کچھ اصول آپ کے خانہ خیال میں ہوں تو ضرور بیان فر مائیں ۔ یا یہ تلوار صرف میرے ہی لئے ہے ۔
    امام اعظم ابو حنیفہ رحمۃ اللہ علیہ پر کمینے کیچڑ اچھالیں اور ان کے اسلام میں بھی شک ظاہر کریں یہ کسی کے نزدیک شاید شرافت ہو ۔شرر ایسے بد زبان اور بد گمان فر قے کے پھکڑ پن کو بر داشت نہیں کرتا ۔ ( فورم کے دوسرے موضوعات تو دیکھتے ہی ہو ں گے)
    یہ اگر شر ہے تو ہوا کرے ۔ آپ نے چھٹے پارہ کی آیت پیش فر مائی ہے میں اس سے پہلے سورہ بقرہ کی آیت نمبر 193 پیش کرتا ہوں ۔ فمن اعتدیٰ علیکم فاعتدوا علیہ بمثل مااعتدیٰ علیکم ۔ ترجمہ: سو جو تم پر زیادتی کرے تو تم بھی اس پر زیادتی کرو جیسی اس نے تم پر زیادتی کی ہے ۔
    صلح حدیبیہ کے موقع پر ایک صاحب مذاق سے بار بار حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی مبارک داڑھی کو ہاتھ لگا رہے تھے ایک صحابی نے تلوار کا دستہ اس کے ہاتھ پر مارا اور فر مایا لات( بُت) کی شرمگاہ چاٹو اعاذنا اللہ اس میں کہیں آپ شر نہ ڈھونڈ لیجئے گا ۔
    شرر میں شر ڈھونڈھنے والوں کے آگے کسی نے ولا تنا بزوا با الالقاب پڑھ دیا تو کیا ہوگا ۔
  13. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    جناب من مفتی شرر صاحب میں معذرت خواہ ہوں کہ آپ کو تکلیف ہوئی.
    مائل شبلی صاحب بس اتنا کہوں گا کہ دین اسلام نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے اخلاق سے پھیلا اور محمد عربی صلی اللہ علیہ وسلم کا ایک نام نبی السیف بھی ہے اور جہاد بھی رسول خدا کا اخلاق ہے.
    اللہ معاف فرمائے مائل شبلی صاحب آپکا طرز تخاطب تو میری محبوب تبلیغی جماعت جیسا ہے اور شرر صاحب تو مرد میدان لگتے ہیں.
    میری تجویز یہ ہے کہ اس موضوع کو مقفل کردیا جائے اور مائل شبلی اگر آپکو شرر میں شر لگتا ہے تو آپ فورم پر آتے رہیں اور مفتی شرر صاحب کی تحریرات پڑھکر ہماری اصلاح کرتے رہیں.
  14. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,917
    موصول پسندیدگیاں:
    960
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    شکریہ شاہ صاحب
    یہ موضوع مقفل کیا جارہا ہے
  15. شرر

    شرر رکن مجلس العلماء رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    97
    موصول پسندیدگیاں:
    5
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    احقر کی نظم پڑھ کر بعض احباب سیخ پا ہو گئے اور اس حد تک چراغ پا ہو گئے کہ انصاف واعتدال کو بالائے طاق رکھا اور اعتراض کے پتھر پھینکنے لگ گئے شکریہ ادا کر نے والوں کو ہدف تنقید بنا یا شکریہ کا نیا معنیٰ تلاش کر نے کا آرڈر جاری کر دیا ۔قرآن کی آیت کا حوالہ دے کر اسلام کی آدھی ادھوری تعلیم کا نمونہ پیش کیا جبکہ نظم ابھی مکمل پیش بھی نہیں کی گئی تھی ۔
    نظم کی تو ضیح لازم ہے تا خیر کیوں ہوئی ؟ ع ‘ ہوئی تاخیر تو کچھ باعث تا خیر بھی تھا ۔
    ( سفر کرنا پڑ گیا تھا ) مسلک ومشرب کا تحفظ ، قوم وملت کا دفاع، اور اسلاف کو گالیاں دینے والوں کے منہ پر تما نچہ جڑنا یہ سب شکریہ کا نہیں مذمت وملامت کا مستحق ہے شاید ۔اسلئے شکریہ کا نیا معنیٰ تلا ش کرنے کی زحمت معترضین کو اٹھا نی پڑی ۔ مجھے دھمکی دی گئی کہ جو بات ثابت نہ کر سکو ایسی بات مت کہو ۔
    شاید ہمارے معترضین کو یہ بات پسند نہیں آئی کہ ‘‘غیر ملقد ٹو لے پر ‘‘ خدا ورسول کی لعنت کا دعویٰ کیا جائے ۔
    سب سے پہلے اس فر قے کا تعارف اہل حدیث علماء کے الفاظ میں ملا حظہ فر مالیں ۔
    نواب صدیق حسن خان صاحب تحریر فر ماتے ہیں ۔اس زمانے میں ایک شہرت پسند اور ریا کار فر قہ نے جنم لیا ہے جو ہر قسم کی خامیوں اور نقائص کے با وجود اپنے لئے قرآن وحدیث کے علم اور اس پر عامل ہو نے کا دعویدار ہے حالانکہ اہل علم وعمل اور اہل عرفان سے اس کو کو ئی تعلق نہیں ۔ ( الحطۃ فی ذکر الصحاح الستہ)
    آگے لکھتے ہیں
    بخدا یہ امر انتہائی تعجب وتحیر کا باعث ہے کہ یہ لوگ اپنے آپ کو خالص مؤحد گر دانتے ہیں اور اپنے ما سوا سب مسلمانوں کو مشرک ، بدعتی قرار دیتے ہیں ۔ حالانکہ یہ خود انتہائی متعصب اور دین میں غلو کرنے والے ہیں ا یضا ۔
    ایک دوسرے اہل حدیث عالم مولانا عبد الجبار صاحب غزنوی لکھتے ہیں
    ہمارے اس زمانے میں ایک فر قہ نیا کھڑا ہوا ہے جو اتباع حدیث کا دعویٰ رکھتا ہے اور در حقیقت وہ لوگ اتباع حدیث سے کنارے ہیں ۔(فتاویٰ علمائے حدیث جلد نمبر 7 ص 80)
    نواب وحید الزماں حیدر آبادی فر ماتے ہیں
    آداب اور سنن اور اخلاق نبوی سے کچھ مطلب نہیں ، غیبت ، جھوٹ ، افتراء سے باک نہیں کرتے ۔ائمہ مجتہدین رضوان اللہ علیھم اجمعین اور اولیا ء اللہ اور حضرات صوفیا کے حق میں بے ادبی اور گستاخی کے کلمات زبان پر لاتے ہیں ، اپنے سوا تمام مسلمانوں کو مشرک اور کافر سمجھتے ہیں ۔ بات بات میں ہر ایک کو مشرک اور قبر پرست کہ دیتے ہیں ۔ ) لغات الحدیث جلد نمبر دو ص 91 کتاب ش) ۔
    میر ابراہیم سیال کوٹی صاحب لکھتے ہیں ۔
    جماعت اہل حدیث اپنے ناقص العلم اور غیر محتاط نام نہاد علماء کی تحریروں اور تقریروں سے دھوکہ نہ کھائے کیونکہ ان میں سے بعض تو پرانے خارجی اور بے علم محض اور پرانے کانگریسی ہیں ۔ الخ ص 36 ،احیاء المیت بحوالہ تحقیق مسئلہ تراویح ص 45۔
    قاضی عبد الاحد خان پوری صاحب رقم طراز ہیں ۔
    اس زمانے کے جھوٹے اہلحدیث، مبتدعین ، مخالفین سلف صالحین ، جو حقیقت ‘‘ما جاء بہ الرسول ‘‘سے جاہل ہیں وہ صفت میں وارث اور خلیفہ ہو ئے ہیں روافض کے یعنی جس طرح شیعہ پہلے زمانوں میں باب اور دہلیز کفر ونفاق کے تھے اور مدخل ملاحدہ وزنا قہ کا تھے اسلام کی طرف ۔ اسی طرح یہ جاہل بدعتی اہل حدیث اس زمانہ میں باب اور دہلیز اور مدخل ہیں ملاحدہ وزنا دقہ منا فقین کے بعینہ مثل تشیع کے ،( التوحید والسنہ فی رد اہل الالحا د والبدعۃ)
    گو یا یہ لوگ ریا کار ، متعصب ، غالی ، خارجی ، مشرک ساز اور بد عتی ہیں
    جو حضرات میری زبان پر معترض ہیں وہ ان مقدس تحریروں کا مطالعہ ضرور فر مالیں ۔
    میں پو چھتا ہوں جھوٹوں پر خدا کی لعنت ہوئی ہے یا نہیں ؟
    بدعتیوں پر خدا کی لعنت اتر تی ہے یا رحمت ؟
    مخالفین سلف صالحین کی گالیوں کا جواب دین اسلام میں صرف قولا لہ قولا لینا ہے یا اور بھی کچھ ؟
    روافض کے وارث وخلیفہ کی مدح کریں یا مذمت ؟
    شرافت کا اظہار اچھا ہے مگر جادہ اعتدال سے بھٹک جانا کسی بھی معاملہ میں برا ہے ۔
    قول لین کی نصیحت قبول ۔ بطریق احسن دعوت دینے کا مشورہ تسلیم ۔ مگر کیا یہی ایک واحد اور آخری تعلیم ہے؟
    معترض صاحب مجھے یہ سوال کرنے کی اجازت دیں گے کہ جزاء سئیۃ سیئۃ مثلھا ( برائی کا بدلہ برائی ہے اسی کے مثل) اور فاعتدوا علیہ بمثل ما اعتدیٰ علیکم کا حق خدا نے مسلمانوں کو نہیں دیا یہ اختیار کفار مکہ ، منافقین مدینہ اور یہود ونصاریٰ کو تفویض ہوا ہے ؟
    یا آج کسی کواس اختیار اور حق کے رد وبدل کا اختیار مل گیا ہے ؟
    آپ تو جواب سخت کو گناہ فر مائیں اور قرآن بدلے میں قتل کو جائز ٹہرائے ۔
    نفس کے بدلے نفس، آنکھ کے بدلے آنکھ ، ناک کے بدلے ناک اور کان کے بدلے کان اور دانت کے بدلے دانت اور زخِموں کا بدلہ لینا شرع میں جائز اور آپ کے اخلاق وشرافت کی رو سے نا جائز ۔
    ایک گال پر تمانچہ کھا کر دوسرا گال پیش کرنا کیا اسلام میں ضروری ہے ؟َ ہے تو کیا دلیل؟
  16. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,917
    موصول پسندیدگیاں:
    960
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India

    شرر صاحب کے اصرار پر مقفل دھا گہ اوپن کر دیا گیا ہے
  17. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    مفتی صاحب اچھی تحریر فرمائی۔ میں منتظمین سے گزارش کروں گا کہ یہ نظم ایک اختلاف کی صورت اختیار کرگئی ہے اس لیے اسے بحث و مباحثہ میں منتقل کردیا جائے۔
  18. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,521
    موصول پسندیدگیاں:
    704
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اسلام علیکم بندہ ناچیز شرر صاحب کی تائید کرتا ہے ۔ ۔ اور جو انداز شرر صاحب نے اختیار کیا ہے وہ صحیح ہے ۔ ۔ میں سمجھتا ہوں جو لوگ غیر مقلدین کی خاص محافل میں جاتے ہیں وہ جانتے ہیں کہ غیر مقلدین احناف کے خلاف کیسی زبان استعمال کرتے ہیں ۔ ۔ ۔ میں آپ کو ایک واقعہ بتاتا ہوں اس محفل کا جس محفل میں میں بھی شریک تھا ۔ ۔ ۔

    غیر مقلدین کسی گاؤں سے چندہ اکھٹا کر کے لائے جب اپنے دفتر میں پنھچے تو ان کے خطیب نے جو مجھے نہیں جانتا تھا ، اس نے سمجھا ہوگا یہاں سب غیر مقلدین ہیں ، بیٹھتے ہی وہ روپے اپنے امیر کو دیتے ہوئے کہا ۔ یہ لیں مالِ غنیمت ۔ میں بہت حیران ہوا اور پوچھا حضرت مالِ غنیمت سے کیا مراد ہے ؟ اس نے کہا کہ یہ سب حنفی تقلید کرتے ہیں اور تقلید کرنے والا مشرک اور مشرک کا مال، مالِ غنیمت۔ اب اس کے بعد جو وہاں ہوا وہ میرا اللہ ہی جانتا ہے ۔ ۔ ۔ اس لئے میں کہتا ہوں کہ شرر صاحب کا انداز کوئی سخت نہیں ہے بلکہ ان کے مقابلہ میں بہت نرم ہے۔

  19. مولانانورالحسن انور

    مولانانورالحسن انور رکن مجلس العلماء رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    1,609
    موصول پسندیدگیاں:
    224
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    بہت ہی زبردست نظم ہے جزا ک اللہ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
  20. شاہد نذیر

    شاہد نذیر خوش آمدید مہمان گرامی

    قرآن کی اس آیت سے شرر صاحب کا استدلال تو درست ہے لیکن اس کا استعمال غلط ہے۔محترم شرر صاحب صرف بدلے تک ہی محدود رہتے تو انکی عاقبت کے لئے اچھا ہوتا لیکن انہوں نے بدلے سے آگے بڑھتے ہوئے ظلم اور ناانصافی کے ذریعے اپنا نامہ اعمال سیاہ کر لیا۔

    شرر صاحب کی جوابی تحریر کو بدلہ اس لئے نہیں کہا جاسکتا کہ اہل حدیث اور شرردیوبندی کی تحریرات کے تقابل سے پتا چلتا ہے کہ اہل حدیث عالم نے سخت زبان استعمال کی لیکن شر نے زیادتی کرتے ہوئے گالم گلوچ شروع کردی حتی کہ اہل حدیث کو بدکار،بدکردار اور زانی تک قرار دے دیا۔انااللہ وانا الیہ اجعون۔
    اس کے علاوہ اہل حدیث عالم نے جو سخت بات کہی وہ سچی ہے یعنی تقلید کے شرک ہونے کی جس کا ثبوت قرآن وحدیث اور امت کے اسلاف سے باآسانی پیش کیا جاسکتا ہے جبکہ شرر صاحب نے جوابی حملے میں جابجا بہتان طرازی اور خالص کذب بیانی سے کام لیا ہے۔

    مقلدین کا انداز ہمیشہ ہی سے یہ رہا ہے کہ اگر ان کی فقہ کے کسی خود ساختہ مسئلہ پر انگلی اٹھائی جائے تو یہ لوگ جوابا قرآن وحدیث پر اعتراض کردیتے ہیں حتی کے اللہ اور اس کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم اور رسول کے اصحاب کو بھی الزام دینے سے باز نہیں آتے۔ یہی روایتی انداز شرر صاحب کی اس پوسٹ کا بھی ہے جس میں اہل حدیث پر تین طلاق کو ایک طلاق قرار دینے پر انتہائی یقین کے ساتھ زنا کا شرمناک فتوی لگایا گیا ہے۔ جبکہ صحیح مسلم کی حدیث بروایت عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہ سے پتا چلتا ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم اور ابوبکرصدیق رضی اللہ عنہ کے پورے دور میں اور عمر رضی اللہ عنہ کے دور خلافت کے ابتدائی دو سالوں تک جب بھی کوئی شخص اکھٹی تین طلاقیں دیتا تھا تو اسے ایک ہی شمار کیا جاتا تھا۔ اب آپ خود اندازہ کرلیں کہ شرر صاحب کے زنا کے فتوے کی زد اہل حدیث کے علاوہ اور کن کن مبارک ہستیوں پر پڑتی ہے۔ ہم ایسے مذہب سے اللہ کی پناہ میں آتے ہیں جس کے دفاع کے لئے اسکے پیروکاروں کے پاس نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم اور صحابہ پر الزام تراشی اور ان مبارک ہستیوں کی کردارکشی کے علاوہ کوئی چارہ کار نہ ہو۔

    اگر کوئی کافر مسلمانوں کو گالی دے تو اس کی زد بلا استثناء ہر مسلمان پر پڑتی ہے اور اس گالی کا مصداق ہر مسلمان ہوتا ہے چاہے وہ کسی بھی فرقے سے تعلق رکھتا ہو چاہے وہ دیوبندی ہو حنفی ہو یا اہل حدیث کیونکہ ان کے درمیان مسلمان ہونے کی قدر مشترک ہے۔ بعینہ اسی طرح جب کوئی غیر مقلد کو گالی دیتا ہے تو اس کی زد مشہور غیرمقلد ابوحنیفہ پر بھی پڑتی ہے۔ کیونکہ بقول اشرف علی تھانوی، امام اعظم ابوحنیفہ کا غیر مقلد ہونا یقینی ہے۔(مجالس حکیم الامت)

    اگر شرر صاحب اہل حدیث اور امام ابوحنیفہ کی غیر مقلد ہونے کی مشترک قدر پر ہی زرا غور فرمالیتے تو شاید ان کے انداز میں کچھ شائستگی آجاتی۔ جو شخص اہل حدیث کی مخالفت میں اتنا بے لگام ہوجائے کہ اپنے ہی امام کی عزت کے درپے ہوجائے تو ایسے شخص کو معقول تو نہیں کہا جاسکتا۔ شرر صاحب کو غیر مقلدین کو گالی دینے سے پہلے ہزار بار سوچنا چاہیے تھا کہ خود ان کے امام بھی یقینی غیر مقلد تھے۔ اس لئے غیرمقلدین کی عزت پر حملہ سب سے پہلے امام ابوحنیفہ کی عزت پر حملہ ہے۔ لیکن افسوس کے تعصب انسان کو اندھا کردیتا ہے۔ جو فرقہ اہل حدیث کے بغض میں اپنے نبی کی عزت کا پاس نہیں کرتا وہ اپنے امام کو کیا اہمیت دے گا۔

اس صفحے کو مشتہر کریں