لببغاء (طوطا)

'حیات الحیوان' میں موضوعات آغاز کردہ از احمدقاسمی, ‏مئی 22, 2011۔

  1. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,624
    موصول پسندیدگیاں:
    789
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    [​IMG][align=center]طوطا
    [/align]
    طوطا : بعض لغوین کہتے ہیں کہ اس میں تین باء ہیں ۔ پہلی اور تیسری باء میں زبر ہے اور دوسری باء میں سکون ہے ۔ یہ ہرے رنگ کا ایک پرندہ ہوتا ہے جس کو عربی میں دُرّۃ بھی کہتے ہیں ۔

    طوطے کی قسمیں اور خصوصیتیں
    طوطا مختلف قسم کا ہوتا ہے ۔ بعض سفید ، بعض ہرے رنگ کے ہوتے ہیں ۔ مؤرخین لکھتے ہیں کہ معز الدولہ بن بویہ کی خدمت میں ایک عجیب وغریب قسم کا طوطا پیش کیا گیا تھا ۔ طوطے کا رنگ سفید، منقار اور پاؤں کالے اور چوٹی پستنی رنگ کی تھی ۔آج کل اکثر طوطے کی
    قسمیں نا پید ہیں ۔زیادہ تو ہرے رنگ کا طوطا پایا جاتا ہے ۔
    طوطا خوش اخلاق ، نہایت سمجھدار ، نقل اتارنے کی مکمل صلاحیت ہوتی ہے ۔ طوطے کو زیادہ تر ، بادشاہ یا امراء ضبط شدہ خبروں سے محظوظ ہو نے کیلئے پالتے ہیں ۔
    یہ پرندہ اپنی غذا پاؤں سے کھاتا ہے ۔جس طرح انسان ہاتھ سے کھاتا ہے ۔ اکثر لوگ اسکی تعلیم کا مخصوص انتظام کر تے ہیں ۔

    طوطے کی انوکھی تعلیم
    امام فن شیخ ارسطو نے لکھا ہے طوطے کو سکھانے کا طریقہ یہ ہے کہ ایک آئینہ لے کر اسکے سامنے رکھ کر اس کی صورت کو دیکھتے رہو ۔ پھر آئینہ میں دیکھ کر بار بار بو لو باتیں کرو تو وہ بھی دہرانے لگے گا اور باتیں کرنا سیکھ جائیگا ۔

    طبی فوائد
    طوطے کی زبان کھانے سے کلام میں شگفتگی ، ٖفصاحت ، روانی ، قوت گویائی میں جرأت پیدا ہو تی ہے ۔اس کا پتہ زبان میں ثقل پیدا کرتا ہے اس کا خون خشک کر کے باریک کر نے کے بعد دوستوں کے درمیان بکھیردینے سے عداوت ودشمنی پیدا ہو جاتی ہے ۔ طوطے کا گوشت دیر ہضم ہوتا ہے مگر دل کو فر حت دیتا ہے ، خاص طور سے پھیپھڑے کے مریضوں کے لئے مفید ہے ۔ طوطے کی بیٹ جھائیں اور سیاہی کو دفع کر دیتی ہے ۔ اس کی بیٹ کچے سبز انگور کے پانی میں ملا کر آنکھوں میں بطور سرمہ استعمال کر نے سے بینائی میں اضافہ اور آشوب چشم سے حفاظٹ رہتی ہے ۔ اگر کوئی بچہ لکنت سے بو لتا ہے تو اس کے لئے طوطے کا گو شت بہترین علاج ہے۔

    تعبیر خواب میں طوطا ایک منحوس اور جُھوٹے شخص کی شکل میں آتا ہے ، بعض معبرین نے لکھا ہے کہ فلسفی آدمی کی صورت میں آتا ہے اس کے بچے بھی فلسفی کے بچے کی شکل میں آتے ہیں اور بعض اہلِ علم نے لکھا ہے کہ طوطا لڑکی یا بچے کی شکل میں رونما ہوتا ہے اور کبھی طوطے کی تعبیر یتیم لڑکے یا لڑکی سے دی جاتی ہے ۔
    (حیات الحیوان)
    محمد نبیل خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. أضواء

    أضواء وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    2,522
    موصول پسندیدگیاں:
    23
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Saudi Arabia
    الله يجزاك كل خير و بارك الله فيك ....
    محمد نبیل خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. سیفی خان

    سیفی خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4,554
    موصول پسندیدگیاں:
    71
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    شئیرنگ کا شکریہ
    ویسے طوطے کو تعلیم کا کیا طریقہ ہے ۔ ۔ ۔
    محمد نبیل خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  4. نورمحمد

    نورمحمد وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    2,119
    موصول پسندیدگیاں:
    354
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    کیا واقعی ایسا ہے ؟؟؟؟

    اور طوطے کا گوشت حلال ہے کیا؟؟؟
    محمد نبیل خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  5. عزیزامین

    عزیزامین وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    7
    موصول پسندیدگیاں:
    5
    صنف:
    Male
    جگہ:
    کینیڈا،البرٹا
    کیا طوطا حلال ہے؟
  6. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,624
    موصول پسندیدگیاں:
    789
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    مسئلہ۔ جو جانور اور جو پرندے شکار کر کے کھاتے رہتے ہيں يا ان کى غذا فقط گندگى ہے ان کا کھانا جائز نہيں جيسے شير بھيڑ يا گيدڑ بلى کتا بندر شکرا باز گدھ وغيرہ۔ اور جو ايسے نہ ہوں جيسے طوطا مينا فاختہ چڑيا بٹير مرغابى کبوتر نيل گائے ہرن بطخ خرگوش وغيرہ سب جائز ہيں۔بہشتی زیور
    ارشاد احمد غازی اور محمد نبیل خان .نے اسے پسند کیا ہے۔
  7. عزیزامین

    عزیزامین وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    7
    موصول پسندیدگیاں:
    5
    صنف:
    Male
    جگہ:
    کینیڈا،البرٹا
    کبھی طوطے کا شکار عام نہیں سنا؟
    محمد نبیل خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  8. عزیزامین

    عزیزامین وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    7
    موصول پسندیدگیاں:
    5
    صنف:
    Male
    جگہ:
    کینیڈا،البرٹا
    دوسری بات وہ پاوں سے کھا تا ہے۔ عام اصول یہی ہے جو پرندہ پاوں سے کھائے وہ حلال نہیں۔؟
    محمد نبیل خان نے اسے پسند کیا ہے۔
  9. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,624
    موصول پسندیدگیاں:
    789
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    میں یہاں فقہا ء کرام ایک ضابطہ نقل کر تا ہوں اسے دیکھ لیں کہ"طوطا" کی حرمت پر یہ ضابطہ کس حد تک منطبق ہوتا ہے پھر حلت وحرمت کا فیصلہ فرمالیں باوجود اس ضابطہ کے کوئی ابہام رہے تو کسی مفتی یا دارالافتاء سے رابطہ قائم فرمالیں۔
    "حلال اور حرام جانوروں میں سے بعض کا حکم حدیث میں صراحتاً بیان کر دیا گیا ہے کہ یہ حلال ہے اور یہ حرام اور جن کے بارے میں صراحتاً حکم نہیں ، ان کے بارے میں حدیث میں ایک ضابطہ بیان کیا گیا ہے ”عن ابن عباس رضی الله عنہ قال : نھی رسول الله صلی الله علیہ وسلم عن کل ذي ناب من السباع وکل ذي مخلب من الطیر “․ (رواہ مسلم،147/2، ط: سعید) یعنی حضرت ابن عباس رضی الله عنہما کی روایت ہے کہ رسول الله صلی الله علیہ وسلم نے وحشی جانوروں میں سے کچلی دانت والے جانور اور پرندوں میں سے پنجوں سے شکار کرنے والے جانور کے گوشت استعمال کرنے سے منع فرمایا ہے
    Last edited: ‏اگست 23, 2014
    محمد نبیل خان اور عزیزامین .نے اسے پسند کیا ہے۔
  10. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    جزاک اللہ خیرا
    احمدقاسمی نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں