مرثیہ:فقیہ الاسلام حضرت مولانا مفتی مظفر حسین

'پسندیدہ کلام' میں موضوعات آغاز کردہ از مفتی ناصرمظاہری, ‏جنوری 4, 2013۔

  1. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری کامیابی توکام سے ہوگی نہ کہ حسن کلام سے ہوگی منتظم اعلی

    پیغامات:
    1,731
    موصول پسندیدگیاں:
    207
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    مرثیہ ​
    فقیہ الاسلام حضرت مولانا مفتی مظفر حسین صاحب خلیفہ حضرت مولانااسعد اللہ صاحب ؒ
    نتیجہ فکر :۔مولانامحمد احسان محسن قاسمی ناظم اعلیٰ جامعہ قاسم العلوم کٹیسرہ مظفرنگریوپی
    مظاہر علوم (وقف)میںسال گذشتہ۲۸؍رجب المرجب ۱۴۲۵ھ؁ مطابق ۱۴؍ستمبر۲۰۰۴ئبروزمنگل کو ’’ختم بخاری شریف‘‘کے پروقاراجتماع کے موقع پرمولانا محمداحسان محسن نے نہایت رقت آمیز اورپرسوز انداز میںیہ مرثیہ پڑھاتھا،حاضرین کی تعداد محتاط اندازہ کے مطابق تقریباً بیس ہزارتھی ۔ (ناصرالدین مظاہری)
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبر ہے کہاں
    ایسا ملت میں کوئی مرشدِ اکبر ہے کہاں
    جس کے دیدارسے اللہ کی یاد آتی تھی
    روح ایمان کو بھی تازگی مل جاتی تھی
    زندگی نورہدایت سے نکھرجاتی تھی
    ان کی ہربات ہر اک دل میں اترجاتی تھی
    آہ!وہ حکمت دانش کا سمندرہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    غم کے دریامیں ہے غرقاب سفینہ دل کا
    کوئی منزل کا نشاں ہے نہ پتہ ساحل کا
    راہبرہے نہ کوئی خضرمیری منزل کا
    کون سلجھائے گاعقدہ بھی میری مشکل کا
    بحر حالات ومسائل کاشناورہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    صدمۂ ہجرمیںڈوبے ہوئے دیوانے ہیں
    اب کہیںقلقل مینا نہ پیمانے ہیں
    ساقی بادہ عرفاںہے نہ مستانے ہیں
    اب فقط بے خودی وکیف کے افسانے ہیں
    آہ وہ پیرمغاںگردش ساغرہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    فقہ و تفسیر و احادیث و بلاغت کا امام
    ناظم اعلیٰ مظاہرکا تھا اک اعلیٰ مقام
    زندگی بخش تھا ہر دل کے لئے ان کاکلام
    حاکم وقت بھی کرتاتھا عقیدت سے سلام
    علم و دانش کا وہ سرمست قلندر ہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    شیخ اسعدؔنے عطاکی تھی خلافت ان کو
    مل گیا مرتبۂ شیخ طریقت ان کو
    علم وفن کی ملی والد سے کرامت ان کو
    اورحاصل تھا فقیہانہ بصیرت ان کو
    اب مظاہر میں شریعت کاوہ مظہرہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    اپنے بگڑے ہوئے حالات بتاؤںکس کو
    دل میں ابھرے ہوئے جذبات دکھاؤں کس کو
    ضبط غم توڑکے خودروؤںرلاؤںکس کو
    آج غم آفریں نغمات سناؤں کس کو
    صاحب دل کی نگاہوںمیں وہ منظرہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    آج ہیں احمدؔ ویوشعؔ و محمدمغموم
    انکے چہروںسے ہے آثارخوشی بھی معدوم
    کتنے افسردہ ہیں یعقوبؔ ہے سب کو معلوم
    ہوگئے سایۂ شفقت سے بھی اطہرمحروم
    سب سے رو رو کے کہتے ہیں برادرہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    جسکے جانے سے مظاہرکاچمن ہے خاموش
    گوشۂ فکر و ادب شعر و سخن ہے خاموش
    صفحۂ ہستی پہ اب صاحب فن ہے خاموش
    عطرغمگین ہے اورمشک وختن ہے خاموش
    شاخ پر پھول کوئی آج گل ترہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    پیار کا تحفہ دیا جس نے سہارنپور کو
    دین کاچشمہ دیا جس نے سہارنپورکو
    علم کا نغمہ دیا جس نے سہارنپورکو
    واہ کیا نسخہ دیا اس سہارنپورکو
    انکے جانے سے مہک پھول کے اندرہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    زیست میں اب کوئی راحت ہے نہ لذت باقی
    رنگ وبوہے نہ گلابوںمیں لطافت باقی
    درد دل کانہیں اب مرہم الفت باقی
    رہ گئی اب تو فقط سینے کی حسرت باقی
    آج محسن شب تاریک کا اختر ہے کہاں
    وہ میرا شیخ میری قوم کا رہبرہے کہاں
    ٭٭٭
  2. محمد ارمغان

    محمد ارمغان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,661
    موصول پسندیدگیاں:
    106
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    سبحان اللہ! ہمیں بھی رُلا دیا اور یادِ محبوب میں گم کر دیا۔ آہ! میرے ۔۔۔۔۔
  3. محمد یوسف

    محمد یوسف منتظم۔ أیده الله منتظم

    پیغامات:
    220
    موصول پسندیدگیاں:
    185
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    ہم جب دیوبند پڑھتے وقت صرف اور صرف حضرت کا دیدار کر نے جاتے تھے حضرت کا چہرہ اتنا پر نور ہوتا تھا کہ 2 گھنٹے حضرت کو دیکھنے کے بعد بھی دل نہیں بھر تا تھا۔
    اچھی نظم ہے اللہ مولانا احسان محسن صاحب کوجزاء خیر دے ۔ آمین
  4. محمد ارمغان

    محمد ارمغان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,661
    موصول پسندیدگیاں:
    106
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    جس مبارک چہرے کی زیارت سے رَبّا کی یاد آئے، بھلا اس کو دیکھنے سے دِل کیسے بھر سکتا ہے؟ اللہ تعالیٰ ہمیں اپنے اکابر کی قدردانی کی توفیق بخشے (آمین)۔
  5. بنت حوا

    بنت حوا فعال رکن وی آئی پی ممبر

    پیغامات:
    4,572
    موصول پسندیدگیاں:
    459
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Pakistan
    سبحان اللہ۔ ۔۔ ۔ ۔۔۔ ۔ جزاک اللہ خیرا
    اچھی نظم ہے اللہ مولانا احسان محسن صاحب کوجزاء خیر دے ۔ آمین
    اللہ تعالیٰ ہمیں اپنے اکابر کی قدردانی کی توفیق بخشے (آمین)۔

اس صفحے کو مشتہر کریں