1. محمدداؤدالرحمن علی

    محمدداؤدالرحمن علی منتظم۔ أیده الله Staff Member منتظم رکن افکارِ قاسمی

    پیغامات:
    6,301
    موصول پسندیدگیاں:
    1,708
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    <div style="direction:rtl;"><TABLE border="1" width="800">
    <table border="1" width="600" align="center">
    <tr>
    <td style="text-align:center; font-size:36px; padding:20px;">
    مسائل رمضان
    </td>
    </tr>

    <tr>
    <td style="text-align:center; font-size:26px; padding:20px;">
    محمدداؤدالرحمن علی
    </td>
    </tr>
    <tr>
    <td style="text-align:justify; font-size:22px; padding:20px;">

    مسئلہ: روزے کی حالت میں عورت کا بچے کو دودھ پلانا جائز ہے،ا س سے روزے میں کوئی فرق تو نہیں پڑیگا۔
    مسئلہ: خون کی جانچ کروانے سے روزہ نہیں ٹوٹتا (نہیں جاتا) بلکہ برقرار رہتا ہے۔
    مسئلہ: روزے کی حالت میں سفید بالوں میں خضاب کرسکتے ہیں، البتہ سیاہ خضاب کا استعمال ہرحال میں ممنوع ہے اگرچہ روزہ اس سے نہیں ٹوٹتا۔
    مسئلہ: جس لڑکے پر علامت بلوغ ظاہر نہیں ہوئی ہے یعنی اس کو انزال نہیں ہوتا تو ایسا لڑکا تراویح میں امامت نہیں کرسکتا۔
    مسئلہ: بوقت ضرورت روزہ کی حالت میں خون کا عطیہ دے سکتا ہے، اس سے روزہ نہیں ٹوٹتا۔ اگر خون دینے سے پہلے روزہ قصداً توڑدیا تو اس کے کفارہ میں اسے 60 روزے لگاتار رکھنا واجب ہوجائیں گے۔ اورایک روزہ کی قضا بھی کرنی ہوگی۔
    مسئلہ :روزے کی حالت میں اپنی بیوی سے صحبت کرنے سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے، قضاء اور کفارہ دونوں لازم ہوجاتے ہیں۔
    مسئلہ :روزہ کی حالت میں خود کا تھوک نگلنا بلا کراہت جائز ہے۔
    مسئلہ : نامحرم پر شہوت کی نظر ڈالنے سے روزہ نہیں ٹوٹتا البتہ مکروہ ہو جاتا ہے۔
    مسئلہ: کان میں تیل یا دوا ڈالنے سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے۔
    مسئلہ: حافظ صاحب کو قرآن سنانے کے معاوضہ میں کچھ دینا کسی طرح جائز نہیں، خواہ بنام ہدیہ دیا جائے یا انعام کے طور پر، اجرت پر قرآن پڑھنے اور سننے والے دونوں ثواب سے محروم رہتے ہیں، ہدیہ کے جواز کی شکل صرف یہ ہوسکتی ہے کہ ختم قرآن کے موقع پر تو کچھ لین دین بالکل نہ ہو، حافظ صاحب بھی اللہ کے واسطے قرآن سناکر مکمل کرادیں، دل میں کچھ لینے یا ملنے کی رغبت و خواہش نہ ہو، اور کسی اور موقع پر کوئی صاحب خیر، اپنی طرف سے حافظ صاحب کو کچھ ہدیہ دیدے یا امداد کردے تو گنجائش ہے، لیکن واضح رہے کہ دوسرے موقع پر بھی قرآن سنانے کے بدلے میں نہ دیا جائے۔
    مسئلہ: اگر انزال یا جماع کا اندیشہ نہ ہو تو روزہ کی حالت میں بیوی کو چھونا یا بوسہ لینا شرعاً منع نہیں ہے بلکہ گنجائش ہے۔
    مسئلہ: روزہ کی حالت میں سر پر تیل لگانا جائز ہے۔
    مسئلہ: احتلام ہونے سے روزہ نہیں ٹوٹتا۔
    مسئلہ: روزہ کی حالت میں اکر کوئی شخص مشت زنی کرے اور انزال ہوجائے تو روزہ ٹوٹ جاتا ہے، البتہ اس پر صرف اس روزہ کی قضا لازم ہے کفارہ واجب نہیں۔
    مسئلہ: روزے میں بیوی کے پستان کو محض چھونے سے روزہ تو نہیں ٹوٹتا لیکن اگر انزال کا خوف ہو یا جماع میں مبتلا ہوجانے کا اندیشہ ہو تو مس کرنا مکروہ ہے، بیوی کا جسم چاٹنا بھی مکروہ ہے۔
    مسئلہ: حاملہ دودھ پلانے والی عورت کے لیے حکم:جو عورت حمل سے ہے یابچے کو دودھ پلا رہی ہے، اگر وہ یہ سمجھتی ہے کہ روزہ رکھنے کی صورت میں عورت یا بچے کو یا دونوں میں سے کسی ایک کو شدید خطرہ یا طبی نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے تو ایسی صورت میں اس کے لیے بھی یہی حکم ہے کہ وہ ان دنوں میں روزے نہ رکھے اور بعد میں اس کی قضا کرے۔

    مسئلہ ایک روزہ کا فدیہ: روزہ کا فدیہ: ایک روزہ کافدیہ ایک صدقة الفطر کے برابر ہوتا ہے۔ البتہ کرنسی نوٹ کی صورت میں ہر سال قیمت کے کم و بیش ہوجانے کی وجہ سے اس میں کمی زیادتی آتی رہتی ہے۔ اس لیے کسی مستند عالمِ دین سے معلوم کرکے فدیہ ادا کیا جائے۔
    جن صورتوں میں روزہ مکروہ نہیں ہوتا
    مسئلہ: (۱) ہر قسم کاا نجکشن یا ٹیکہ لگوانا۔ (۲)کسی عُذر سے رگ کے ذریعے گلوکوز چڑھوانا۔ (۳) ضرورت کے وقت خون چڑھوانا (۴)طاقت کا انجکشن لگوانا (۵) ایسی آکسیجن لینا جس میں ادویات کے اجزاءشامل نہ ہوں۔ (۶)کلی کرنے کے بعد منہ کی تری نگلنا (۷)اپنا لعاب دہن جو منہ میں ہو نگل لینا، البتہ اسے منہ میں جمع کرکے نگلنا نہیں چاہیے۔ (۸) ضرورت کے وقت کوئی چیز چکھ کر تھوک دینا (۹) نکسیر پھوٹنا (۰۱) چوٹ وغیرہ کے سبب جسم سے خون نکلنا (۱۱) مرگی کا دورہ پڑجانا (۲۱)حلق میں بلا اختیار دھواں، گردو غبار یا مکھی وغیرہ کا چلا جانا (۳۱)بھول کر کھانا پینا یا بھول کر بیوی سے صحبت یعنی جماع کرنا (۴۱) اگر جماع کا اندیشہ نہ ہو تو بیوی سے بوس و کنار کرنا (۵۱) سوتے ہوئے احتلام (غسل کی حاجت) ہوجانا (۶۱) کان میں پانی ڈالنا یا بے اختیار چلے جانا (۷۱)خود بخود قے آجانا (۸۱) آنکھوں میں دوا یا سرمہ لگانا ، (۹۱) مسواک کرنا (سر یا بدن پر تیل لگانا (۱۲) عطر یا پھولوں کی خوشبو سونگھنا (۲۲) رومال بھگو کر سرپر ڈالنا یا کثرت سے نہانا (۳۲) بچے کو دودھ پلانا (۴۲) پان کی سرخی اور دوا کا ذائقہ منہ سے ختم نہ ہونا (۵۲)دانتوں سے نکلنے والا خون نگل لینا بشرطیکہ وہ لعابِ دہن سے کم ہو اور منہ میں خون کا ذائقہ محسوس نہ ہو۔

    مسئلہ: سگریٹ اور بیڑی وغیرہ کا استعمال: سگریٹ، حقہ یا بیڑی وغیرہ کا استعمال اگر بحالتِ روزہ کیا گیا تو روزہ فاسد ہوجائے گا اور اس پر بھی قضاءو کفارہ واجب ہوجائے گا۔

    مسئلہ:روزہ مکروہ کرنے والی چیزیں: مکروہ ہونے کا مطلب یہ ہے کہ روزہ کے صحیح ثمرات ، اس کی رحمتیں، اس کی برکتیں، نیز اس کا اجر کامل طور پر حاصل نہیں ہوتا بلکہ اس کے اندرکمی واقع ہوجاتی ہے۔) (ماخوذ از فتاویٰ دارالعلوم دیوبند)
    </td>
    </tr>
    </table></div>

اس صفحے کو مشتہر کریں