مولانا احمد رضا خان صاحب کی شاعری

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از نعیم, ‏دسمبر 27, 2012۔

  1. نعیم

    نعیم وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    79
    موصول پسندیدگیاں:
    2
    جگہ:
    Afghanistan
    مولانا احمد رضا خان صاحب کی شاعری
    خان بابا نے اپنی مائہ ناز کتاب “حدائق بخشش“ میں “اما حضرت عائشہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ“ کے متعلق “ تنگ وچست ان کا لباس الخ“ کہہ کر اپنے رو سیاہی پر مہر لگا لی تھی وہیں اس کے علا وہ اور بکواس کر کے اپنے پر کفر کی مہر لگا لی ۔آہ !اس گھر کو آگ لگ گئی گھر کے چرا غ سے۔ چند نمونے “حدائق بخشش “سے۔

    کہتے ہیں احمد رضا خان صاحب بریلوی اپنے شیعی عقیدہ کے مطابق ،رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے پردہ میں حضرت علی رضی اللہ عنہ کی شانِ الو ہیت ثابت کرنا چاہتے ہیں۔ملاحظہ فر مایئے

    نہ ہوسکتے ہیں وہ اول نہ ہو سکتے ہیں وہ آخر
    تم اول اور آخر ابتدا ء تم انتہا تم ہو

    خدا کہتے نہیں بنتی جدا کہتے نہیں بنتی
    اسی پر اس کو چھوڑا ہےوہی جانے کہ کیا تم ہو
    قرآن مجید تو اول وآخر ہونا اللہ تعالیٰ کی صفت بتارہا ہے اور خان بابا کس دلیری اور دریدہ دہنی سے کہہ رہے ہیں کہ اصلیت میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ہی ( جو حضرت علی کا ہی ایک روپ ہیں ) اول وآخر ہیں اور ازلی وابدی صفات سے متصف ہیں ۔لیکن صاف صاف کہنا سخت مشکل ہے اس لئے تقیہ کے سہارا لیتے ہوئے اس معمہ کو ایسے ہی الجھا ہوا چھوڑتا ہوں ۔( آپ کو خدا سے جدا یعنی خدا کے علاوہ دوسری ہستی بھی کہنے کی جراءت)
    دوسری جگہ کہتے ہیں

    مظہر حق ہو تمہیں ، مظہر حق ہو تمھیں
    تم میں ہے ظاہر خدا تم پہ کروڑوں درود
    اہل علم وفہم کہتے ہیں خان بابانے بلا وجہ مظہر حق ہو تمہیں کی تکرار دو مرتبہ یونہی نہیں کردی اور نہ ہی ضرورت شعری کی وجہ سے بلکہ اپنے شیعی عقیدہ کا در پردہ اظہار کر رہے ہیں کہ محمد اور علی دونوں میں ہی خدا کا وجود ہے یا پھر بالفاظ دیگر دونوں ہی خدا کا روپ ہیں۔
    ایک اور شعر

    [align=center] تجھ سے اور جنت سے کیا مطلب وہابی دور ہو
    ہم رسول اللہ کے، جنت رسول اللہ کی!
    [/align]

    شب معراج کا ذکرکرتے ہوئے خان بابا لکھتے ہیں

    اٹھے جو قصر دنیٰ کے پردے کوئی خبر دے تو کیا خبر دے
    وہاں تو جاہی نہیں دوئی کی، نہ کہہ وہی تھے ارے وہی تھے
    ۔

    ( شب معراج میں بوقت ملاقات اللہ تعالیٰ نے حجاب رویت ہٹادیا تو اس وقت پتہ چلا کہ جو ہستی عرش پر مستوی تھی وہ کوئی اور نہیں ، خود آنحضور صلی کی ہی تھے۔ لعنۃ اللہ علی الکاذبین ۔

    اس بات کو بابا جی بریلوی دوسری جگہ مزید وضاحت سے فر ماتے ہیں!

    وہی نور حق، وہی ظل رب، انہیں سے ہے انہیں کا سب
    نہیں ان کی ملک میں آسماں کہ زمیں نہیں کہ زماں نہیں !
    وہی لامکاں کے مکیں ہوئے، سر عرش تخت نشیں ہوئے
    وہ نبی ہے جس کے ہیں یہ مکاں ، وہ خدا ہے جس کا مکاں نہیں
    ۔

    ان اشعار میں خاں صاحب نے اپنے کفر پر مہر نہیں لگادی؟ کتنی ڈھٹائی سے گویا ہیں ـ کائنات کے تخلیق کرنے والے اور دنیا وآخرت کے ہر چیز کے مالک حقیقی دراصل آنحضور صلی اللہ علیہ وسلم ہی ہیں اور ٹھیک اسی طرح حضرت علی رضی اللہ عنہ کے بارے میں شیعی عقیدہ بھی ہے ۔خان بابا بل واسطہ یا بلا واسطہ مرید پیر سے دو جوتا آگے بڑھ کے کہتا ہے۔
    اللہ کے پلہ میں وحدت کے سوا کیا ہے ۔
    لینا ہے ہمیں جو کچھ لے لیں گے محمد سے۔

    بریلوی حلقوں میں مشہور ایک اور شعر ملاحظہ ہو

    وہی جو مستوئ عرش تھا خدا ہو کر
    اتر پڑا ہے مدینہ میں مصطفیٰ ہو کر
    خان بابا کا ایک اور شعر ملاحظہ ہو
    اٹھادو پردہ ، دکھادو چہرہ کہ نو رباری حجاب میں ہے
    زمانہ تاریک ہو رہا ہے کہ مہر کب سے نقاب میں ہے
    ۔

    ہر مسلمان یہ عقیدہ رکھتا ہے کہ اللہ تعالیٰ زمان ومکان ، جسم وہئیت اور جہت وسمت سے ماورا اور پاک ہیں وہ تو نور علیٰ نور ہیں ۔خان بابا بریلوی کے اس شعر کا کا صاف مطلب یہ ہے کہ اللہ تعالیٰ کا نور حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے پردہ میں جلوہ گر ہے اور اگر آپ پردہ اٹھا دیں تو یہ حقیقت بھی واضح ہو جائیگی کہ آپ خود ہی خدا ہیں ۔(نعوذ با اللہ من ذالک) ۔ع:لو آج اپنے دام میں صیاد آگیا۔
    [/size]
    محمود حسن نے اسے پسند کیا ہے۔
  2. مولانانورالحسن انور

    مولانانورالحسن انور فعال رکن Staff Member وی آئی پی ممبر

    پیغامات:
    1,519
    موصول پسندیدگیاں:
    123
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    بہت خوب ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    محمود حسن نے اسے پسند کیا ہے۔
  3. مفتی ناصرمظاہری

    مفتی ناصرمظاہری وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,644
    موصول پسندیدگیاں:
    131
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
  4. سیفی خان

    سیفی خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4,552
    موصول پسندیدگیاں:
    66
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    بہت خوب ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
  5. فقیر نوشاہ

    فقیر نوشاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    انسان کو جب عقل نہ ہو تو وہ بڑوں کے ادب سے ایسے ہی بے بہرا ہو جاتا ہے جیسے اوپر پوسٹ میں باتیں لکھیں اور کی گئیں،،،،
    کمال کا بغض و حسد ہے امام احمد رضا خان علیہ رحمہ کے ساتھ ،،، توبہ استغفار ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آپ لوگوں کی اس بغض و عنا و فرقہ وارانہ سوچ پہ ماتم ہی کیا جاسکتا ہے ،،، انا للہ وانا الیہ راجعون ،،،،،
    اللہ سمجھ عقل کی توفیق دے آپ لوگوں کو ،،،،
  6. فقیر نوشاہ

    فقیر نوشاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    امام احمد رضا کی شاعری آپ جیسے عقل کے اندھے نجدی نہیں سمجھ سکتے ،،،،، اندھا کیا جانے بسنت کی بہار ،،،،
    آپ لوگوں کی اس فرقہ ورانہ سوچ پھر انا للہ وانا الیہ راجعون ۔۔۔۔۔۔ :(
  7. فقیر نوشاہ

    فقیر نوشاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    من راءنی فقد راءالحق ،،، بخاری شریف کی حدیث ہے اس کی کسی سے بھی ترجمہ و تشریح اور شروحات میں اس کا مطلب جانیئے گا آپ اپنی اس پوسٹ اور سوچ پر ماتم کریں گے ،،،،
  8. محمود حسن

    محمود حسن وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    3
    موصول پسندیدگیاں:
    2
    صنف:
    Male
    جگہ:
    جمشیدپور
    رد بریلویت پر نایاب و اہم کتابوں کے ڈاونلوڈ لنکس
    https://archive.org/details/AhlESunnatKiPahchan

    اہل سنت کی پہچان از امام اہل سنت ؒ

    https://archive.org/details/SaifEHaqqani

    سیف حقانی از خادم علماء دیوبند محمد عمر صاحب
    https://archive.org/details/DawatEIslamiKaTajziyatiMutaala

    دعوت اسلامی کا تجزیاتی مطالعہ از مفتی شمشاد بریلوی
    https://archive.org/details/DawatEIslamiKeQadamWahabiyatKeJanib

    دعوت اسلامی کے قدم وہابیت کی جانب از بریلوی مصنف

    https://archive.org/details/JharyaKaMunazra

    جھڑیا کا فیصلہ کن مناظرہ
    مناظر اہل سنت حضرت علامہ ومولاناسید طاہر حسین گیاوی رضاخانی مناظر مولوی ارشد القادری از مولانا عبد المالک بھوج پوری
    https://archive.org/details/KafirKoan_201607

    کون ہے کافر کون مسلماں
    مولوی اختر رضاخان کا رد از بریلوی
    https://archive.org/details/Mkdansari_gmail

    مجموعہ رسائل چاندپوریؒ جلد ۲

    https://archive.org/details/SalimMiyaAndSonsKeLarkharateQadam

    سالم میاں آئند سنس کے لڑکھڑاتے قدم
    از بریلوی مصنف
    https://archive.org/details/AttariUddariJild2

    اخباری الداری حصہ ۲ از مصطفیٰ رضا خان

    https://archive.org/details/AttariUddariJild1

    الطاری الداری حصہ ۱ از مصطفیٰ رضا خان
    https://archive.org/details/@muhammad_kamaal_uddeen#
  9. اشماریہ

    اشماریہ رکن مجلس العلماء رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    342
    موصول پسندیدگیاں:
    216
    صنف:
    Male
    السلام علیکم و رحمۃ اللہ
    میں اس تھریڈ کا عنوان مہذب کر رہا ہوں۔
    محترمی @نعیم بھائی۔ ان اشعار کا اسکین درکار ہے۔
  10. ابن عثمان

    ابن عثمان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    99
    موصول پسندیدگیاں:
    83
    صنف:
    Male
    محترم نوشاہ بھائی سے اتنا ضرور متفق ہوں کہ آج کل ایسی پوسٹیں فرقہ واریت کا ہی موجب بنتی ہیں ۔ اور دونوں اطراف سے ۔
    اور اگر ہم مسئلہ کو حل کرنا چاہیں تو یہی بات بہتر ہے کہ ایسے مسائل میں وضاحت بھی انہی علماء کی معتبر ہے جن کی عبارات ہیں ۔ نہ کہ مخالف کی۔
    جیسے حضرت عائشہؓ سے متعلق اشعار کے بارے میں بریلوی علماء یہ وضاحت دیتے ہیں کہ یہ ان کے ہے ہی نہیں ۔
    محترم بھائی مولانا ساجد نقشبندی جو رد بریلویت میں متخصص ہیں اور ویسے بھی وسیع النظر عالم ہیں۔۔۔ نے کچھ دلائل اس کے خلاف بھی پیش کئے تھے ۔ لیکن بہتر یہی ہے کہ وضاحت بریلوی علماء کی ہی مان لی جائے ۔ اس سے اس بات کو بھی تقویت ملے گی کہ علماء دیوبند کی عبارات کی بھی وہی تعبیر و وضاحت معتبر ہے جو خود علمائے دیوبند کی طرف سے ہی کی جائے ۔ نہ کہ اس کی وضاحت بریلوی علماء کریں ۔
    پیامبر اور اشماریہ .نے اسے پسند کیا ہے۔

اس صفحے کو مشتہر کریں