میرے بھیا میرے چندا میرے انمول رتن

'بچوں کی کتابیں' میں موضوعات آغاز کردہ از احمدقاسمی, ‏جولائی 6, 2011۔

  1. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,631
    موصول پسندیدگیاں:
    791
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    میرے بھیا میرے چندا میرے انمول رتن
    تیرے بدلے میں زمانے سے کو ئی چیز نہ لوں

    تیرے سانسوں کی قسم کھا کے ہوا چلتی ہے
    تیرے چہرے کی جھلک پاکے بہار آتی ہے

    ایک پل بھی میری نظروں سے جو تو اوجھل ہو
    ہر طرف میری نظر تجھکو پکار آتی ہے

    میرے بھیا میرے چندا میرے انمول رتن
    تیرے بدلے میں زمانے سے کو ئی چیز نہ لوں

    تیرے چہرے کی مہکتی ہوئی لڑیوں کیلئے
    ان گنت پھول امیدوں کے چنے ہیں میں نے

    وہ بھی دن آئے کہ ان خوابوں کی تعبیر ملے
    تیری خاطر جو حسیں خواب بنے ہوں میں نے

    میرے بھیا میرے چندا میرے انمول رتن
    تیرے بدلے میں زمانے سے کو ئی چیز نہ لوں
    [/align][/size]
  2. أضواء

    أضواء وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    2,522
    موصول پسندیدگیاں:
    23
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Saudi Arabia
    میرے بھیا میرے چندا میرے انمول رتن
    تیرے بدلے میں زمانے سے کو ئی چیز نہ لوں


    بہت ہی بہترین ہے آپ کا شکریہ

اس صفحے کو مشتہر کریں