ٹیلی ڈراموں میں صحابہ اکرام کی ڈرامائی تمثیل، علماء میں بحث کا موضوع

'بحث ونظر' میں موضوعات آغاز کردہ از احمدقاسمی, ‏جولائی 11, 2012۔

  1. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,649
    موصول پسندیدگیاں:
    792
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    ٹیلی ڈراموں میں صحابہ اکرام کی ڈرامائی تمثیل، علماء میں بحث کا موضوع​

    ڈرامہ سیریز میں “فاروق اعظم “ کی تمثیل کا مقصد اسلامی اقدار کا فروغ​


    دبئی 10 جولائی (ایجنسیز) مڈل ایسٹ براڈ کاسٹنگ کارپوریشن “ایم بی سی“کی تیار کردہ رمضان ڈرامہ سیریز ایک ایسے وقت میں ٹی وی پر نشر کے لئے پیش کی جارہی ہے جب علماء اور دینی حلقے اب بھی “ل صحابہ“ کی حمایت اور مخالفت میں تقسیم ہے ۔
    یہ ڈرامہ سیریز اس سال رمضان المبارک میں “ایم بی سی “ نٹ ورک پر نشر کی جائیگی ۔
    العربیہ ڈاٹ نیٹ کی رپورٹ کے مطابق علماء کی ایک کثیر تعداد جلیل القدر صحابی رسول حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے کردار کو ڈرامائی شکل دینے اور ان کی خدمات کو عام کرنے کے لئے ان کی تمثیل کی حامی ہے جبکہ علماء کا دوسرا گرپ اس دلیل کے تحت اس کی مخالفت کرتا ہے کہ صحابہ کرام کی دور جدید میں ڈرامائی شکل ان کی توہین کے مترادف ہے ۔خیال رہے کہ “ایم بی سی“ گروپ کی جانب سے ایک سال قبل ڈرامہ سیریز سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ نشر کرنے کا علان کیا گیا جس کے بعد علماء اور مذہبی حلقوں کی جانب سے اس پر ملا جلا رد عمل سامنے آیا تھا۔ایم بی سی کے زیر اہتمام تیار کی جانے والی اس سیریز میں سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی اسلام کی اشاعت ، دعوت ،اسلامی ریاست کے قیام ،ان کی شخصی خصائل اور خاص طور پر سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ عالم اسلام کے ایک بہترین “رول ماڈل “پر روشنی ڈالی گئی ہے ۔

    تمثیل انبیاء وصحابہ درست نہیں


    مصر کی سب سے بڑی علمی درسگاہ جامعۃ الازہر کی سپریم علماء کمیٹی کے رکن ڈاکٹر محمد رافت عثمان نے “العربیہ ڈاٹ نیٹ“ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ “ہم ڈرامہ سیریز عمر فاروق کے بارے میں پہلے بھی اپنی راے دے چکے ہیں ۔اس سلسلے میں جامعۃ الازہر کی اسلامک ریسرچ اکیڈمی آج بھی اپنے سابقہ موقف پر قائم ہے ۔ہمارا موقف یہ ہے کہ انبئاء کرام ،صحابہ کرام بالخصوص عشرہ مبشرہ اور آل بیتِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی تمثیل غلط ہے ،اس سے ان بزرگ شخصیات کی توہین کا پہلو نکلتا ہے ۔
    سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ بھی ایک جلیل القدر صحابی سول ہیں اور عشرہ مبشرہ میں بھی ان کا نام شامل ہے لہذا ان کی تمثیل جائز نہیں ہو گی ۔ ایک دوسرے عالم دین شیخ عبد الفتاح عساکر نے “العربیہ داٹ نیٹ“ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ “ قرآن مجید میں کہیں بھی صحابہ کرام کی تمثیل کی ممانعت موجود نہیں ۔جبکہ شیخ ابراہیم رضا نے کہا کہ “ میں بعض شرائط کے ساتھ تمثیل صحابہ کا قائل ہیں بشرطیکہ تمثیل کا مقصد اسلامی تعلیمات کی وضاحت مقصود ہو اور اس کے لئے صحابہ کرام کی شخصیت کو بطور مثال پیش کیا جائے ۔

    قرآن میں حرمت کی کوئی دلیل موجود نہیں

    مکہ مکرمہ میں امر بالمعروف اور نہی عن المنکر شعبے کے سابق چیئر مین الشیخ ڈاکٹر احمد الغامدی نے کہا کہ “ میں خلیفہ دوم سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی تمثیل پر مبنی ڈامہ سیریزکی پہلے بھی حمایت کر چکا ہوں ،کیونکہ میرے پاس تمثیل صحابہ کی ممانعت میں قرآن وحدیث سے کوئی دلیل ثابت نہیں ہے ۔ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر الغامدی نے کہا کہ “ڈرامہ سیریز میں سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی تو ہین کا پہلو تب نکلے گا جب ان کی شخصیت کو غلط انداز میں یش کیا جائیگا اور حقائق کو ٹھکرایا جائے گا ، جبکہ نئی نسل کو سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی شخصیت کی خوبیوں اور ان کے کارناموں کے بارے میں آگاہ کر رہے ہیں جن سے عالم لوگ واقف نہیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ خلفائے راشدین اور دیگر بزرگ ہستیوں کی تمثیل اس مقصد کے لئے جائز ہے کہ ہم ان کے ذریعے اسلام کی سنہری اقدار کے بارے میں اپنے عوام کو آگاہ کریں ۔فلم “سیدنا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ“ کی اسلام کے لئے خدمت تصور کی جانی چاہئے کیونکہ اس کا مقصد بھی اسلامی اقدار وروایات کو عام کرنا ہے “ایک دوسرے سوال کے جواب میں شیخ الغامدی نے کہا کہ جو لوگ تمثیل صحابہ کے قائل نہیں اور وہ اسے مطلق حرام قرار دیتے ہیں وہ اپنی دلیل کے جواز کے لئے قرآن کریم یا سنت نبوی سے کوئی دلیل پیش کریں تو میں بھی مان جاؤں گا ۔ایک دوسرے سوال کے جواب میں سعودی عالم دین نے کہا کہ صحابہ کرام کی تمثیل کی مخالفت کی ایک وجہ یہ بھی بیان کی جاتی ہے کہ اس طرح کے اقدامات سے بعض لوگ صحابہ کرام ا ور عام لوگوں میں خلط ملط کر دیتے ہیں۔جس کی وجہ سے تمثیل صحابہ کی ممانعت کی جاتی ہے ۔لیکن یہ تاثر درست نہیں ہے ِصحابہ کرام کا بلند مقام ومرتبہ مسلمانوں میں پہلے سے راسخ ہے۔

    مقام صحابہ اور ڈرامہ سیریز


    ڈرامہ سیریز میں صحابی رسول یکی شکل میں کسی دوسرے شخص کو بطور تمثیل پیش کر نے کے مخالف مصری عالم دین ڈاکٹرر افت عثمان نے کہا کہ “انبیاء َرسل اور صحابہ کرام اللہ تعالیٰ کے چندہ اور بر گزیدہ بندوں میں شمار کئے جاتے ہیں ۔“ڈاکٹر عثمان نے کہا کہ ہمیں کسی صحابی کی تمثیل کے ذریعےاسلامی تعلیمات کےاظہار کے بجائے صحابہ کرام کے بلند مقام ومرتبے کو مدِ نظر رکھنا چاہئے ۔ایک دوسرے عالم دین ڈاکٹر محمد الشحات الجندی نے کہا کہ عشرہ مبشرہ اور چاروں خلفاء الراشدین کسی تمثیل سے مبریٰ ہیں ان کا ڈرامائی کردار پیش کرنا صحابہ کرام کی صریحا تو ہین ہے ۔اسلام نے ان جلیل القدر شخصیات کو بہت اونچا مقام عطا کیا ہے۔
    ان کی شخصیات اور تعلیمات ،افکار اور اعمال کیا مسلمانوں کے لئے سب سے بڑی تمثیل نہیں؟
    میرے خیال میں تکریم صحابہ اس طرح وجوب کا درجہ رکھتی ہے جس طرح تکریم رسول وجوب کا درجہ رکھتی ہے ۔منقول از روز نامہ سیاست
  2. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    میں تو اس فتویٰ کو حق سمجھتا ہوں

    عالم دین ڈاکٹر محمد الشحات الجندی نے کہا کہ عشرہ مبشرہ اور چاروں خلفاء الراشدین کسی تمثیل سے مبریٰ ہیں ان کا ڈرامائی کردار پیش کرنا صحابہ کرام کی صریحا تو ہین ہے ۔اسلام نے ان جلیل القدر شخصیات کو بہت اونچا مقام عطا کیا ہے۔
  3. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,649
    موصول پسندیدگیاں:
    792
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    میں تو کہتا ہوں سارے صحابہ کرام کسی بھی تمثیل سے مبرا ہیں۔بے شک صحابہ آپس میں قدرومنزلت میں متفاوت ہیں ،لیکن کیا کسی ادنیٰ سے ادنیٰ صحابی کے قدر ومنزلت کو کوئ قطب غوثَ ابدال ،امام ،محدثَ فقیہ ،مجتہد صوفی وصافی ۔شہنشاہ ،وزیر وکبیر پہنچ سکتا ہے ؟
    نہیں ہر گز نہیں تو عبد العساکر کا فر مان ہویا احمد الغامدی کا فتویٰ،شیخ ابراہیم رضا کا شرائط کے ساتھ اجازت نامہ سب ردی کی ٹوکری کے لائق ہے ۔الحمد للہ بر صغیر کے علماء کرام کا ضیر اس حد تک بے ضمیر نہیں ہوا کہ صحابہ کرام کی تمثیل کا سودا کر نے لگیں۔
  4. qureshi

    qureshi وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    292
    موصول پسندیدگیاں:
    209
    جگہ:
    Afghanistan
    میں نہیں جانتا شرع اس مسلئہ میں کیا کہتی ہے،میرے ضمیر کا فیصلہ ہے ،کہ یہ گستاخی ہے،کل یہ لوگ انبیاء کیساتھ بھی ایسا سلوک کریں گے۔اللہ ہم کو فتنوں سے دور رکھیں۔
  5. احمدقاسمی

    احمدقاسمی منتظم اعلی۔ أیدہ اللہ منتظم اعلی

    پیغامات:
    3,649
    موصول پسندیدگیاں:
    792
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    کئی پیغمبروں پر سیریز نکل بھی چکی ہیں ۔مثلآ حضرت یوسفّ حضرت موسیٰ ،حضرت سلیمانّ پر
    کتنی دکھ کی بات ہے کہ ناظرین جب غیر نبی فاسق وفاجر کو ان پاک نفوس قدسیہ کے نام سے پکارتے ہیں۔
  6. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    5,317
    موصول پسندیدگیاں:
    48
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    یہ گستاخی ہے۔
    انبیاء کرام کے متعلق بھی فلمیں بنی ہیں اسکے متعلق دیوبندی، اہلحدیث اور بریلوی مسلک کے علمائے کرام کے فتاویٰ دیکھیں۔
    فتاویٰ
  7. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    اللہ کریم ہمارے حال پر رحم فرمائے آمین
  8. talibilm

    talibilm وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    19
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    جو لوگ یہ کہہ رہے ہیں کہ کہ“ خلفائے راشدین اور دیگر بزرگ ہستیوں کی تمثیل اس مقصد کے لئے جائز ہے کہ ہم ان کے ذریعے اسلام کی سنہری اقدار کے بارے میں اپنے عوام کو آگاہ کریں“ حقیقت میں وہ احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں وہ شاید اس بات سےبھی ناواقف ہے کہ خلفائے راشدین ہو یا کوئی بھی صحابی ہو ۔ہم سب اُن صحابیوں کی پاوُں کی خاک بھی نہیں ہیں اور کچھ نہیں ۔اور یہ نام نہاد ڈرامہ بازوں کو بتادیں کہ اپنی یہ ڈرامہ بازی اپنے پاس ہی رکھیں تو اچھا ہوگا۔
    واسلام
    طالبعلم
  9. محمد ارمغان

    محمد ارمغان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,661
    موصول پسندیدگیاں:
    106
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    یہ فتنوں کا دور ہے۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کی حفاظت فرمائے۔
  10. شکیل یونس

    شکیل یونس وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    147
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    للہ کریم ہمارے حال پر رحم فرمائے آمین

اس صفحے کو مشتہر کریں