کتاب فطرت کے سر ورق پر جو نام احمد رقم نہ ہوتا

'نعت رسول مقبول صلی اللہ علیہ وسلم' میں موضوعات آغاز کردہ از قاسمی, ‏مارچ 13, 2011۔

  1. قاسمی

    قاسمی خوش آمدید مہمان گرامی

    [/size]
    نعت شریف
    کتاب فطرت کے سر ورق پر جو نام احمد رقم نہ ہوتا
    تو نقشِ ہستی ابھر نہ سکتی وجود لوح وقلم نہ ہوتا

    یہ محفلِ کن فکاں نہ ہوتا جو وہ امام الامم نہ ہوتا
    زمیں نہ ہوتی فلک نہ ہوتا عرب نہ ہوتا عجم نہ ہوتا

    ترے غلاموں میں بھی نمایاں جو تیرا عکسِ کرم نہ ہوتا
    تا بارگاِ ازل سے ان کو خطابِ خیر الامم نہ ہوتا

    نہ روئے حق سے نقاب اٹھتا نہ ظلمتوں کا حجاب اٹھتا
    فروغِ بخشش نگاہِ عرفاں اگر چراغِ حرم نہ ہوتا

    سوائے صدیق کون پاتا حضورِ انور کی جانشینی
    کہ وہ نہ ہوتا تو یوں جہاں میں بلند دیں کا علم نہ ہوتا

    یہ سچ ہے بعد نبی نبوت کا فخر فاروق ہی کو ملتا
    جو سلسلہ وحی آسماں سے حضور ہی پر ختم نہ ہوتا

    خلافتِ راشدہ کا منصب اگر نہ ہوتا نصیب عثماں
    تو دفترِ وحی آسمانی مزین ومنتظم نہ ہوتا

    زہے علومِ مقامِ حیدر خوشی سے کہتے تھے یہ پیمبر
    کہ فتح ہوتا نہ قلعہ خیبر جو آج ابن عم نہ ہوتا​
    [size=x-large]
  2. اعجازالحسینی

    اعجازالحسینی وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    3,081
    موصول پسندیدگیاں:
    26
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Afghanistan

اس صفحے کو مشتہر کریں