ہماری پو لیس

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از مولانانورالحسن انور, ‏جنوری 22, 2013۔

  1. مولانانورالحسن انور

    مولانانورالحسن انور رکن مجلس العلماء Staff Member رکن مجلس العلماء

    پیغامات:
    1,537
    موصول پسندیدگیاں:
    144
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ۔۔۔۔۔۔ امریکی پولیس کا سپا ہی کہنے لگا ہم چوری کے دس گھنٹے بعد چور پکڑ لیتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ چینی پولیس مین کہنے لگا ہم 24 گھنٹوں میں چور کو گرفتار کر لیتے ہیں ۔۔۔۔۔۔ مگر ہمارا سپاہی سینہ تان کے کہنے لگا جناب چھوڑو ہماری پولیس نے جو ترقی کی ہے وہ دنیا میں کسی پولیس نے نہیں ۔۔۔۔کی یہ بات سنکر سب کے منہ کھلے رہ گے۔۔۔۔۔۔ اتنی ترقی ۔۔۔۔۔ ارے بتاو تو سہی تم لوگ کیا کرتے ہو۔۔۔۔۔۔ ہمارا شیر جوان کہنے لگا ہمیں 24 گھنٹے پہلے پتہ چل جاتا ہے فلاں جگہ ڈاکہ پڑنا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔ وہ کیسے اوجی ۔۔۔۔۔۔ جن نے ڈاکہ ڈالنا ہو تا ہے وہ پہلے ہماری مٹھ گرم کرتے ہیں پھر ڈاکہ ڈالتے ہیں یہ ۔۔۔۔۔۔۔ ہے ترقی ۔۔۔۔۔۔۔ اب دیکھیں سیدھی سی بات ہے سہانے موسم میں چمکتے ستاروں کی روشنی میں ۔۔۔۔۔۔۔ اگر کوئی جوڑا جذبات سے مغلوب ہو کر ذیلی سڑک پر واک کر نے آگیا ۔۔۔۔۔۔۔ اور بد قسمتی سے گشت پہ موجود پولیس کے فرض شناس سپا ہیوں کی نظر ان پر پڑ گئی ۔۔۔۔۔۔۔۔ تو نکاح کا فارم ساتھ نہ رکھنے پر انہیں جر مانہ تو دینا ہی پڑے گا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اگر آپ کے پاس گاڑی کے کاغذات نہیں یا ڈرائیونگ لا ئسنس نہیں۔۔۔ تو پھر آپ کو حق الخدمت تو ادا کر نا پڑے گا آخر پولیس کا کام ہے خدمت آپکی ۔۔۔۔۔۔۔ ایک پولیس والے نے گاڑی کو روکا ۔۔۔۔ ڈرائیور جی۔۔۔۔۔ پو لیس والا کاغذات دکھاو ۔۔ اس نے دکھادئے ۔۔۔۔۔۔ لائسنس دکھاو دیکھا دیا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ شناختی کارڈ جی یہ لیجے ۔۔۔۔۔۔ انسپکٹر آواز مارتے ہو ئے۔۔۔۔۔۔حوالدار جی سر ۔۔۔۔ اس کا چالان کردو۔۔۔۔۔۔۔ جناب میرے کاغذات مکمل ہیں ۔۔۔۔۔۔ چالان کس چیز کا۔۔۔۔۔ برخوردار تیری گاڑی کے پچھلے ٹائر میں ہوا کم ہے ۔۔۔۔۔۔۔ یہ ہیں تنخواہ میں اضافے کے سیدھے سادھے نسخے ۔۔۔۔۔۔ جو ہماری پولیس کی ایجاد ہے ۔۔۔۔۔۔ اور اسے کہتے ہیں 15 ھزار تخواہ 10 ھزار اوپر سے ہو جاتا ہے ۔۔۔۔۔ بڑا اللہ کا فضل ہے ۔۔۔۔۔۔ایک شخص کی چوری ہوگی دوست احباب نے اسے صبر کامشورہ دیا لیکن وہ فورا پولیس کو 15 نمبر پر مطلع کر نے لگا۔۔۔۔۔۔ہیلپ لائن پر موجود مہذب اور شائستہ پولیس افسر نے پوچھا چور ہیں ۔۔ یا تشریف لے گے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔ اس نے کہا چلے گے ہیں ۔۔۔۔۔ اچھا تو آپ تھانے تشریف لے آئیں ۔۔۔۔ یہ تھانے جاپہنچے انسپکٹر نے مرحوم دادا جان سے لے کر نوزائیدہ پوتے تک ہر ایک کے احوال اور مصروفیات ادھیڑ ڈالیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ان کے سسرال کے حالات سالوں کے بارے میں سب ہی معلو مات حاصل کر کے انہیں مجرموں کی گرفتاری کی یقین دہانی کر واکر رخصت کردیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    اگلے دن فون پر انہیں بتا یا کہ چند مشتبہ افراد پکڑے ہیں ۔۔۔۔۔۔ اپنے مجرموں کی شناخت کر لو۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ خوشی خوشی تھانے گے شناختی پریڈ میں جو مجرم سامنے لاے گے وہ ان کے پانچ عدد سالے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آخر چوری شدہ مال سے زیادہ پیسے دے کر اپنے بے قصور سالے رہا کر واے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ مہنگائی کے دور میں اضافی پیکیچ ہے ۔۔۔۔۔۔۔ پھر اس نظام میں اوپر سے لے کر نیچے تک سب اسی گنگا سے ہاتھ ہی نہیں دھورہے بلکہ پورا غسل کر رہے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔
    ایک شخص کا گد ھا دولتیاں چلانے کا ماہر تھا ۔۔۔۔۔۔۔ اس گدھے نے مالک کی ساس کو ایک ایسی زوردار دولتی ماری کہ وہ بے چاری اف کئے بغیر مرگئی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔یہ خبر شہر میں پھیل گئی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔دیکھتے ہی دیکھتے اس شخص کے گھر میں مردوں کی قطار لگ گئی ہر ایک کی خواہش تھی یہ نادر گدھا میں خرید لوں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اچانک ایک انسپکٹر بھی آٹپکا ۔۔۔۔۔ اس نے گھر میں داخل ہو کرگدھے کے مالک کو طلب کیا۔۔۔۔۔۔۔ مالک ڈرتا ڈرتا حاضر ہوا جی حضور۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میں بلکل ندوش ہوں ۔۔۔۔۔ بے قصور ہوں ۔۔۔۔ اس کم بخت گدھے نے ایسی دولتی ماری کہ ساس ۔۔۔ سانس بھی نہ لے سکی ۔۔۔۔۔۔۔۔ انسپکٹر اچھا اچھا رو مت یہ دہشت گرد گدھا اب یہاں نہیں رہے گا۔۔۔۔۔۔ مالک جناب غریب ہوں آپ اسے کیا کریں گے ۔۔۔۔ یہ روزی کمانے کا واحد ذریعہ ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ انسپکٹر۔۔۔۔۔ تجھے کہ دیا ہے یہ یہاں نہیں رہے گا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مالک جناب احسان فر مائیں ۔۔۔۔۔ انسپکٹر نے کہا ادھر آ۔۔۔۔ مالک آیا۔۔۔ انسپکٹر نے اس کے کان میں کہا اسی گدھے نے تیری ساس ماری ۔۔۔۔۔۔۔۔ مالک جی سر جی۔۔۔ انسپکٹر تیری ساس مرگئی ۔۔۔۔۔۔۔ مالک ۔۔۔ جی ہاں ۔۔۔۔۔۔۔ پھر میری کیوں زندہ ہے ۔۔۔۔۔ انسپکٹر نے کھولا او رگدھا لے گیا۔۔۔۔۔۔
    کہتے ہیں پو لیس کا محکمہ حضرت عمر رضی اللہ عنہ کی ایجاد ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مگر اس دور کی پولیس اور ہمارے دور جدید کی پولیس میں زمین وآسمان کا فرق ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔پولیس کا مقصد عوام کی خدمت محافظت ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مگر ہماری پولیس ما ہا نہ وصولی حق الخدمت کے نام پر وصول کر لیتی ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جتنے زیادہ محکمے پولیس کےہیں شاید کسی اور کے ہوں ۔۔۔۔۔۔۔ ٹریفک پولیس گارڈن پولیس۔۔۔۔۔۔۔ موٹر وے پولیس۔۔۔۔۔۔ ہائی وے پولیس۔۔۔۔۔۔ مگر چوریاں اسی تسلسل سے ہو ریی ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس کے لئے ایمان تقوی اور جذبہ خدمت ضروری ہے جو خصوصا اس محکمے میں مفقود ہے
  2. سارہ خان

    سارہ خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,567
    موصول پسندیدگیاں:
    17
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Pakistan
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس کے لئے ایمان تقوی اور جذبہ خدمت ضروری ہے جو خصوصا اس محکمے میں مفقود ہے
    بہت اچھی بات لکھی ہے جزا ک اللہ
  3. محمد ارمغان

    محمد ارمغان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1,661
    موصول پسندیدگیاں:
    106
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ماشاء اللہ۔ عمدہ تحریر ہے۔اللہ تعالیٰ صحیح سمجھ عطا فرمائے۔
  4. محمدداؤدالرحمن علی

    محمدداؤدالرحمن علی منتظم۔ أیده الله Staff Member منتظم رکن افکارِ قاسمی

    پیغامات:
    6,301
    موصول پسندیدگیاں:
    1,708
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    آمین ثم آمین
  5. نورمحمد

    نورمحمد وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    2,119
    موصول پسندیدگیاں:
    354
    صنف:
    Male
    جگہ:
    India
    ماشاء اللہ۔ ۔ ۔ بہت بہترین تحریر ۔ ۔ خصوصا“ آخری جملہ !!!!!:->~~ :->~~
  6. ذیشان نصر

    ذیشان نصر ناظم۔ أیده الله ناظم

    پیغامات:
    634
    موصول پسندیدگیاں:
    28
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    بہت خوب مولانا صاحب ۔۔۔۔!
    لگتا ہے آج کل مولانا موصوف کی حسِ ظرافت ذرا پھڑکی ہوئی ہے ۔۔۔! اس لئے موصوف طنز ومزاح کے نشتر چلائے جا رہے ہیں ۔۔۔۔!
  7. بنت حوا

    بنت حوا فعال رکن وی آئی پی ممبر

    پیغامات:
    4,572
    موصول پسندیدگیاں:
    458
    صنف:
    Female
    جگہ:
    Pakistan
    بہت اچھی بات لکھی ہے جزا ک اللہ
  8. محمد نبیل خان

    محمد نبیل خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    8,688
    موصول پسندیدگیاں:
    772
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    پاک پولیس کی خوبصورت تعریف فر مائی ہے ۔ ۔۔ جی ہاں وہ ہیں ہی ایسےFrying Pan Mash
  9. سیفی خان

    سیفی خان وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    4,553
    موصول پسندیدگیاں:
    72
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    ماشاء اللہ۔ ۔ ۔ بہت بہترین تحریر

اس صفحے کو مشتہر کریں