ثقافتی میزائیل

'اصلاح معاشرہ' میں موضوعات آغاز کردہ از اسد محمود, ‏جون 8, 2012۔

  1. اسد محمود

    اسد محمود وفقہ اللہ رکن

    پیغامات:
    1
    موصول پسندیدگیاں:
    0
    صنف:
    Male
    جگہ:
    Pakistan
    پاکستان میں بھارت کے بین البراعظمی میزائیل پروگرام اور اسکے تحت کیےء جانے والے تجربوں کا تو پرنٹ اور الیکٹرونک میڈیا میں بہت چرچا ہوتا ہے۔ لیکن کیا کبھی ہم نے اپنے ازلی ِ دشمن کے ان میزائیلوں کے بارے میں سوچا ہے جو روز ہمارے اور ہمارے بالغ اور نا بالغ اہل و عیال کے ذہنوں پر برستے ہیں۔ بس میں بیٹھ جإئیں، شادی یا کسی تقریب میں‌چلے جائیں یا گھر میں سڑک پر سے گزرتے ہوئی کسی گاڑی کے ڈیک کے زریعے یہ مہلک اور تباہ کن میزائیل ہماری عبادات اور معاملات کو تہس نہس کرتے ہوئے انتہای کامیابی کے ساتھ اپنی تخلیق کے تمام مقاصد کو حاصل کرتے ہیں۔ ان میزائیلوں سے بچنا اب انتہائی مشکل بلکہ نا ممکن ہوچکا ہے آپ چاہتے ہوئے بھی انکی مار سے بچ نہیں سکتے۔ یہ میزائیل کبھی ہماری ُمنیوں کو بدنام کراتے ہیں کبھی ہماری معصوم انارکلیوں کو ڈسکو میں بلاتے ہیں، کبھی نا پختہ ذہنوں کو "موجاں" کرنے کی ترغیب دیتے ہیں‌تو کبھی شیلاوں کی جوانی سے ہمارے معصوم بچوں کو ورغلاتے ہیں۔۔۔ اور تو اور اب بسم اللہ بھی کروا رہے ہیں%||:-{ ۔۔۔ الامان حفیظ۔۔۔ اللہ ہمارے حالات پر رحم فرماےء آمین۔۔۔۔

اس صفحے کو مشتہر کریں