امام اعظم ابوحنیفہ رحمہ اللہ کی اپنے شاگرد امام ابویوسف کووصیتیں

محمد طیب قاسمی

وفقہ اللہ
رکن
1۔۔۔ فرمایا اے یعقوب! تم اللہ ڈرنے کو اور امانت اداکرنے کو اور تمام عوام اور خواص کی خیر خواھی کو لازم پکڑو -
2۔۔۔ تنھائی میں اللہ سے اسی طرح تعلق رکھو- جیسا کہ اعلانیہ طور پر سب کے سامنے اللہ سے تعلق رکھتے ھو -خلوت، جلوت میں اخلاص سے اللہ کی طرف متوجہ رہو -
3۔۔۔ لوگوں کے درمیان ہوتے ہوئے اللہ کا ذکر زیادہ کیا کرو تاکہ لوگ تم سے ذکرسیکھیں اور وہ بھیکرنے لگیں -
4۔۔۔ نمازوں کے بعد اپنے لیے کُچھ ورد مقرر کرلو- جس میں قرآن کی تلاوت کے ساتھ اللہ کا ذکر کیا کرو -
5۔۔۔ ھر مہینے میں چند دن مقرر کر لو - جس میں روزے رکھا کرو تاکہ دوسرے لوگ بھی اس میں تمھاری اقتداء کریں -
6۔۔۔ اپنے نفس کی نگرانی کروتاکہ وہ گناہوں اورلایعنی کاموں میں مشغول نہ ہوجائے ۔
7۔۔۔۔خطاؤں میں لوگوں کی اتباع نہ کرو۔بلکہ صحیح اوردرست کاموں میں ان کااتباع کرو
8۔۔۔جب تمہیں معلوم ہوکہ فلاں آدمی اچھانہیں تواس کی برائی کاذکرنہ کرو بلکہ اس کےاندرخیرتلاش کرو۔
 

رجاء

وفقہ اللہ
رکن
٭ہمیشہ اپنے دل کو غنی رکھنا ،اور تنگ دستی ظاہر نہ ہونے دینا -
٭ جو کوئی تم سے کسی چیز میں مشورہ طلب کرے تو اس کو وہ مشورہ دو جس میں تم کو یقین ہو کہ یہ مشورہ تم کو اللہ سے قریب کردے گا -
٭ مجلس میں غصہ سے پرہیز کرنا -
٭ جو لوگ تم سے فقہ حاصل کرنے والے ھوں اُن کی طرف پوری توجہ کرنا - انکو اپنی اولاد کی طرح سمجھنا -
٭زیادہ ھنسنے سے پرہیز کرنا کیونکہ یہ دل کو مردہ کردیتا ھے -
٭ بازاروں اور مسجدوں میں مت کھانا -
٭ راستوں میں مت بیٹھو اگر تمھیں ضرورت ہو کہ گھر کے علاوہ کسی اور جگہ بیٹھو تو مسجد میں بیٹھ جانا-
 
Top