سب کہاں ہیں ؟؟

محمدداؤدالرحمن علی

وفقہ اللہ
رکن
سب کہ رہے ہیں “ہم ادھر ہی ہیں“ ہم نے تو آنکھیں گھماکر، ناک پر عینک چڑھا کر، اجلاس بلاکر، آنکھیں مل کر، آنکھوں میں قطرے ڈال کر۔ سب کو دیکھا۔ لیکن کوئی نظر نہیں آیا۔
 
Top