مولانااطہرحسینؒ:روحانی باتیں،نورانی تذکرے

مفتی ناصرمظاہری

کامیابی توکام سے ہوگی نہ کہ حسن کلام سے ہوگی
رکن
مولانااطہرحسینؒ:روحانی باتیں،نورانی تذکرے
بانی مظاہرعلوم حضرت مولانامحمدسعادت علی ؒکاتذکرہ فرمارہے تھے اثناء گفتگوفرمایاکہ مولانافقہی میدان کے زبردست عالم تھے اورشایداسی کانتیجہ ہے کہ آج تک مظاہرعلوم کوجوبھی ناظم ملااس کااصل مزاج اورمذاق فقیہانہ رہاہے،حضرت مولاناعنایت الٰہیؒ،حضرت مولاناخلیل احمدمہاجرمدنیؒ،حضرت مولاناعبداللطیف پورقاضویؒ،حضرت مولانامحمداسعداللہ رام پوری اورحضرت مولانامفتی مظفرحسین یہ تمام حضرات فقہی دنیامیں کسی تعارف کے محتاج نہیں ہیں اورمظاہرعلوم کے دارالافتاء کے رجسٹروں میں ان تمام حضرات کے تحریرفرمودہ قابل قدرکارناموں کے قیمتی ذخیرے موجودہیں ۔
حضرت مولانامحمدسعادت علیؒکتابوں کے مطالعہ اورمآخذپرمکمل نظررکھنے میں اپنے زمانہ میں مشہورتھے اوریہی وجہ تھی کہ حضرت مولاناشاہ محمداسحق محدث دہلوی جیساعبقری عالم ومحدث اورفقیہ حضرت کے فتاویٰ پراعتمادفرماتھے۔
ایک دفعہ حضرت مولاناسعادت علیؒ کھانانوش فرمارہے تھے اورکسی کتاب کامطالعہ بھی فرمارہے تھے اسی دوران گھروالوں نے آپ کے سامنے انڈے کاسالن پیش کردیا،حضرت بے خبری میں وہ سالن کھاگئے ،کھانے سے فارغ ہونے کے بعدجب گھروالوں نے بتایاکہ آپ نے انڈے کاسالن کھایاہے توفرمایاکہ اسی وقت کیوں نہیں بتایاتھاتاکہ میں مزے لے لے کرکھاتا۔اس سے مولاناکی مطالعہ سے غایت دلچسپی کااندازہ ہوتاہے۔
 
Top